in

متحدہ اپوزیشن کے احتجاج سے پی ٹی آئی سرکار گھر جائے گی:   جمعیت علمائے اسلام (ف) ریاض ریجن

متحدہ اپوزیشن کے احتجاج سے پی ٹی آئی سرکار گھر جائے گی:   جمعیت علمائے اسلام (ف) ریاض ریجن

متحدہ اپوزیشن کے احتجاج سے پی ٹی آئی سرکار گھر جائے گی:   جمعیت علمائے اسلام …

ریاض (وقار نسیم وامق) سعودی عرب میں جمیعت علمائے اسلام (ف) ریاض ریجن کے جنرل سیکرٹری ممتاز خان نے کہا ہے کہ مولانا فضل الرحمٰن ملک کو جمہوری اقدار کے مطابق چلانے کی بات کرتے ہیں اور اسکے لئے آئین کی بالادستی کے ذریعے اداروں کو مستحکم بنانے اور قانون کی بالادستی کی بات کرتے ہیں کیونکہ کوئی بھی ملک آئین اور قانون کے بنا نہیں چل سکتا، پاکستان میں متفقہ آئین تو موجود ہے مگر اس کی بالادستی نہیں ہے اور اسے پامال کرکے رکھ دیا گیا ہے. 

ممتاز خان نے کہا کہ جمعیت علماء اسلام (ن) اسلامی اقدار کی پاسداری اور ملک پاکستان کو آئین کے مطابق چلانے کے لئے ہمیشہ سے میدان عمل میں رہی ہے، مولانا فضل الرحمان پاکستان کے زیرک سیاست دان ہیں مگر موجودہ حکمران جیسے دیگر سیاسی اپوزیشن جماعتوں کے خلاف الزامات لگا کر انکی کردار کشی کر رہے ہیں اسی طرح مولانا پر بھی جھوٹے اور بے بنیاد الزامات لگائے جا رہے ہیں اور میڈیا ٹرائل کیا جا رہا ہے مگر عوام حکمرانوں کے اس جھوٹے پروپیگنڈے پر کان نہیں دھر رہی بلکہ اپنے ساتھ کیے گئے وعدوں کا جواب مانگ رہی ہے. 

ممتاز خان کا کہنا تھا کہ ایک کروڑ نوکریاں، پچاس لاکھ گھر اور دیگر سبز باغ نما وعدوں کا جواب حکومت کے پاس نہیں ہے، ملک کو سیاسی اور معاشی بحرانوں کا شکار کرنے والے عمران خان کے پاس ماسوائے الزامات کے کچھ باقی نہیں بچا، جس وزیراعظم کی آدھی کابینہ کرپٹ اور نیب زدہ ہو اسے پہلے احتساب خود کا کرنا چاہئیے، عمران خان عوامی مسائل کو حل کرنے کے اہل نا کبھی تھے اور نا آج ہیں ہر گزرتا دن پاکستان کی بدحالی کا سبب بن رہا ہے مسائل کے انبار لگ چکے ہیں ایسے میں جہاں نوازشریف کی تقریر کو پیمرا کے ذریعے آن ائیر کرنے سے روکا جا رہا ہے ایسے ہی مولانا فضل الرحمان کی تقاریر اور جلسوں کو بھی ٹی وی سکرین سے دور رکھنے کے احکامات صادر کیے جا رہے ہیں عمران خان ذہنی طور پر ایک ڈکٹیٹر ہے اس لئے اسے تنقید پسند نہیں ہے. 

ممتاز خان نے مزید کہا کہ آج پوری اپوزیشن اکٹھا ہوچکی ہے جسکی شروعات مولانا فضل الرحمٰن نے کی تھی ہمیں خوشی ہے کہ مولانا فضل الرحمٰن ڈیموکریٹک موومنٹ کے سربراہ مقرر ہوئے ہیں اور ہمیں یقینِ کامل ہے کہ متحدہ اپوزیشن کے احتجاج سے پی ٹی آئی سرکار گھر جائے گی اور ملک کی نااہل حکمران سے جان چھوٹ جائے گی اوورسیز پاکستانی بھی عمران خان کی کارکردگی سے خوش نہیں ہیں اور چاہتے ہیں کہ عمران خان اب سیاست کی جان چھوڑ کر کسی کرکٹ اکیڈمی کے سربراہ بن جائیں کیونکہ وہ یہی کام بہتر انداز میں کر سکتے ہیں باقی سیاست اور ملک و قوم کی خدمت انکے بس کی بات نہیں ہے. 

مزید :

سیاست





Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

ٹیم اے کے بعد ٹیم بی گرفتار لیکن اگر وہ بھی گرفتار ہوگئے تو پھر کیا ہوگا؟ احسن اقبال کا حیران کن موقف 

ٹیم اے کے بعد ٹیم بی گرفتار لیکن اگر وہ بھی گرفتار ہوگئے تو پھر کیا ہوگا؟ احسن اقبال کا حیران کن موقف 

ایم کیوایم پاکستان بھی متحرک کس جماعت کا سینئر رہنما اپنی پارٹی چھوڑ کر شامل ہوگیا؟ خبرآگئی

ایم کیوایم پاکستان بھی متحرک کس جماعت کا سینئر رہنما اپنی پارٹی چھوڑ کر شامل ہوگیا؟ خبرآگئی