in

چوری شدہ سافٹ ویئرز کا بڑھتا ہوا استعمال اور اسکےنقصانات

چوری شدہ سافٹ ویئرز کا بڑھتا ہوا استعمال اور اسکےنقصانات

ستر فیصد لوگ ایسے ہی سافٹ ویئر استعمال کررہے ہیں

انفارمیشن ٹیکنالوجی کا زمانہ ہے لیکن ہم تو اس دوڑ میں بھی پیچھے رہ گئے پاکستانیوں کی اکثریت چوری کے سافٹ ویئرز استعمال کر رہے ہیں جس سے ایک

تودنیا میں ملک کی بدنامی ہوتی ہے دوسرے صارفین کے لٹیروں کے ہتھے چڑھنے کے خطرات بھی ہر وقت منڈ لاتے رہتے ہیں ۔

شاید آپ بھی چوری شدہ سافٹ وئيرز استعمال کررہے ہو کيونکہ 70 فيصد سے زائد پاکستانی چوری شدہ سافٹ وئيرز استعمال کررہے ہيں لیکن ملک ميں آئی ٹی صنعت تيزی سے پروان چڑھنے کے باوجود اس مسئلے کو کنٹرول کرنے کے اقدامات کہيں نظر نہيں آرہے۔

آئی ٹی ایکسپرٹ نوید مرزا کا کہنا ہے کہ اگر پاکستانی سافٹ وئیر ہاوسز اپنے کمپیوٹر میں پائیریٹڈ سافٹ وئیر استعمال کرتے ہیں اور کوئی سافٹ وئیر ڈویلپ کرتے ہیں تو اس ایگزیکیٹو کوڈ کے اندر جو آپ اپنے کلائنٹ کو باہر بھیجتے ہیں اس میں کوئی مال وئیر ایگزی کیوٹ ہو جاتا ہے تو یہ بدنامی کا باعث بن سکتا ہے۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

معروف بھارتی گلوکارہ سنیدھی چوہان نے بالآخر اپنی ازدواجی زندگی سے متعلق خاموشی توڑ دی

معروف بھارتی گلوکارہ سنیدھی چوہان نے بالآخر اپنی ازدواجی زندگی سے متعلق خاموشی توڑ دی

پنجاب کے 25 اضلاع میں تمام کالجز بندکردیے گئے

پنجاب کے 25 اضلاع میں تمام کالجز بندکردیے گئے