in

پاکستان افغانستان میں کارروائی کیلئے امریکی اڈہ نہیں بن سکتا،صدر

پاکستان افغانستان میں کارروائی کیلئے امریکی اڈہ نہیں بن سکتا،صدر

صدر پاکستان ڈاکٹر عارف علوی کا کہنا ہے کہ پاکستان، امریکا کی افغانستان سے واپسی کے بعد کارروائیوں کیلئے اس کا اڈہ نہیں بنے گا، پیغمبر اسلام کے توہین آمیز خاکوں کی اشاعت کے ردعمل میں فرانسیسی سفیر کی ملک بدری سے متعلق پارلیمان کی سفارش پر ہی حکومت کوئی حتمی فیصلہ کرے گی۔

اسلام آباد میں وائس آف امریکا کو دیے گئے خصوصی انٹرویو میں صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا کہ خارجہ پالیسی کے فیصلے وفاقی حکومت کا استحقاق ہے تاہم پارلیمنٹ اپنی سفارشات سامنے لاسکتی ہے، ایک جمہوری ملک ہونے کی حیثیت سے فرانس کے سفیر کو ملک سے نکالنے کی قرارداد پارلیمنٹ میں پیش کی تاکہ عوام کے جذبات کی عکاسی ہوسکے اور پارلیمان ہی وہ فورم ہے جہاں عوام کی خواہشات کا صحیح اظہار ہو سکتا ہے۔

فرانس کے سفیر کو ملک سے نکالنے کے سوال پر ان کا کہنا تھا کہ اس کا فیصلہ قرارداد کی منظوری کے بعد ہی کیا جائے گا، تاہم اُنہوں نے کہا کہ وزیرِ اعظم عمران خان یہ سمجھتے ہیں کہ سفیر کو نکالنے سے پاکستان کو معاشی نقصان ہو گا۔

ڈاکٹر عارف علوی کا کہنا تھا کہ پاکستان کے مذہبی طبقے کا پُرتشدد احتجاج بعض یورپی ممالک کے اسلام کے حوالے سے اقدامات کا نتیجہ ہے، جس نے ایسے وقت میں تہذیبوں کو ایک دوسرے کے سامنے لا کھڑا کیا ہے جب دنیا کو امن کی ضرورت ہے، مجھے کوئی حق نہیں پہنچتا کہ آزادیٔ اظہارِ رائے کی آڑ میں ایسی بات کروں جو کسی کو تکلیف پہنچائے، یورپ میں ہولوکاسٹ سے متعلق بات کرنا قانونی طور پر جرم قرار دیا گیا ہے، پیغمبرِ اسلام کے گستاخانہ خاکوں کی اشاعت سے لوگوں کے جذبات مجروح ہوئے۔

افغانستان سے امریکی انخلاء

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے امریکی صدر جو بائیڈن کی جانب سے افغانستان سے امریکی افواج کے انخلاء کے پروگرام کا خیرمقدم کرتے ہوئے اُمید ظاہر کی کہ یہ امن کی جانب بہتر قدم ثابت ہو گا، یہ بات خوش آئند ہے کہ افغانستان میں قیامِ امن کیلئے جو مؤقف پاکستان کا تھا آج دنیا کے دیگر ممالک بھی اپنا رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ وزیرِ اعظم عمران خان اور پاکستان تحریکِ انصاف نائن الیون کے بعد سے یہ کہتی رہی ہے کہ جنگ مسئلے کا حل نہیں ہے، اب ضرورت اس امر کی ہے کہ امن کے ساتھ ساتھ افغانستان کی تعمیرِ نو کیلئے بھی دنیا کی طاقتیں اور ہمسایہ ممالک مل کر کام کریں۔

عارف علوی کا کہنا ہے کہ پاکستان کا افغانستان کے استحکام اور تعمیرِ نو میں کلیدی کردار ہو گا جب کہ تعلیم، صحت اور تعمیرات میں اسلام آباد، کابل کی بھرپور معاونت کرے گا،

صدر مملکت نے واضح کیا کہ پاکستان ستمبر میں پڑوسی ملک سے اپنی فوجوں کے انخلاء کے بعد “افغانستان میں امریکی کارروائی کا اڈہ” نہیں بن سکے گا۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

سسرالیوں کے تشدد سے حوا کی ایک اور بیٹی دم توڑ گئی

سسرالیوں کے تشدد سے حوا کی ایک اور بیٹی دم توڑ گئی

چیئرمین سینیٹ الیکشن:مصدق ملک نے اپوزیش کاساتھ دینے والوں کابتادیا

چیئرمین سینیٹ الیکشن:مصدق ملک نے اپوزیش کاساتھ دینے والوں کابتادیا