in

رمضان میں روزہ توڑنے پر کفارہ

Iftar-Pakistan-AFP

رمضان المبارک کے مہینے میں مسلمانوں کے لیے روزے فرض کیے گئے ہیں لیکن دائمی بیمار، کمزور افراد اور مسافروں کو روزہ نہ رکھنے کی چھوٹ ہے۔

اگر ایک شخص رمضان کا روزہ رکھ کر افطار سے قبل روزہ توڑتا ہے تو ایسے افراد کو روزے کا کفارہ ادا کرنا ہوتا ہے۔

فقہ حنفی کے مطابق روزے کا کفارہ

روزے کا کفارہ ایسی صورتحال میں ادا کرنا ہوتا ہے جب ایک شخص روزہ توڑ دے۔ روزہ توڑنے کے عمل میں کچھ کھانا پینا، سگریٹ/ہکہ پینا یا جنسی تعلق قائم کرنا شامل ہے۔

جامعتہ العلوم الاسلامیہ بنوری ٹاؤن کے مطابق کفارے میں اس پر مسلسل 60 روزے رکھنا ضروری ہوگا۔

اگر اس کی قدرت نہ ہو تو 60 مسکینوں کو صدقہ فطر کی مقدار غلہ یا اس کی قیمت دینا لازم ہے، ایک صدقہ فطر کی مقدار (پونے دو کلو) گندم یا اس کی قیمت ہے۔

ایک مسکین کو 60 دن صدقہ فطر کے برابر غلہ وغیرہ دیتا رہے یا ایک ہی دن 60 مسکینوں میں سے ہر ایک کو صدقہ فطر کی مقدار دے دے، دونوں جائز ہے۔

صدقہ فطر کی مقدار غلہ یا قیمت دینے کے بجائے اگر 60 مسکینوں کو ایک دن صبح وشام، یا ایک مسکین کو 60 دن صبح وشام کھانا کھلا دے، تو بھی کفارہ ادا ہوجائے گا۔

اس سال فطرہ کی رقم 140 روپے مقرر کی گئی ہے اور اس حساب سے 60مساکین کے لیے رقم 8ہزار 400روپے بنتی ہے۔

کیا بغیر کسی وجہ کے روزہ نہ رکھنے والے کفارہ ادا کریں گے؟



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

انٹر بینک مارکیٹ میں ڈالر مہنگاہو گیا سٹاک مارکیٹ سے بھی پریشان کن خبر آ گئی 

انٹر بینک مارکیٹ میں ڈالر مہنگاہو گیا سٹاک مارکیٹ سے بھی پریشان کن خبر آ گئی 

بھارت: آکسیجن لیک ہونے سے22 افراد ہلاک، ویڈیو دیکھیں

بھارت: آکسیجن لیک ہونے سے22 افراد ہلاک، ویڈیو دیکھیں