in

شریف خاندان کو 175کنال اراضی جعلسازی سے منتقل ہونے کاانکشاف

شریف خاندان کو 175کنال اراضی جعلسازی سے منتقل ہونے کاانکشاف

معاملہ سامنے آنے پر زمین واپس پنجاب حکومت کے سپرد

جاتی امراء ميں شريف خاندان کو سرکاری زمين جعلسازی سے منتقل ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔ تفصيلات سماء نے حاصل کرلیں، جس کے مطابق 1989ء ميں وحيدہ بيگم کو 175 کنال اراضی الاٹ کی گئی، ايک سال بعد وہی زمین شريف خاندان کو منتقل ہوگئی۔

جاتی امراء کی زمین جعلسازی سے منتقلی کی دستاویز سماء کو موصول ہوگئیں، جس کے مطابق شريف خاندان کی رہائش گاہ جاتی امراء کی 175 کنال اراضی کی منتقلی منسوخ کردی گئی ہے۔

دستاويزات کے مطابق 1989ء ميں جب نواز شريف پنجاب کے وزيراعلیٰ تھے تو وحيدہ نامی کسی خاتون کو جاتی امراء ميں صوبائی حکومت کی اراضی جعلی دستاويزات تيار کرکے الاٹ کردی گئی اور پھر صرف ايک سال بعد یہی اراضي نواز شريف کي والدہ شميم بيگم نے خريدنا شروع کردیں، کچھ عرصے ميں 175 کنال سرکاری زمين شريف خاندان کو منتقل ہوگئی۔

رپورٹ کے مطابق محکمہ مال نے زمين کے انتقال کا ريکارڈ چيک کيا تو کہيں بھی وحيدہ بيگم نامی خاتون کو مذکورہ رقبے کی الاٹمنٹ کا کوئی ريکارڈ يا دستاويز نہ ملی، جس کی بنياد پر زمين کو دوبارہ پنجاب حکومت کے نام کرديا گيا ہے۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

عورت مارچ منتظمین کیخلاف پشاور میں ایف آئی آر درج

عورت مارچ منتظمین کیخلاف پشاور میں ایف آئی آر درج

ڈی جی پارکس لیاقت قائمخانی کیخلاف ریفرنس دائر

ڈی جی پارکس لیاقت قائمخانی کیخلاف ریفرنس دائر