in

سندھ: رمضان میں مساجدوامام بارگاہوں میں عبادت کا طریقہ کاروضع

Namaz

محکمہ داخلہ سندھ نے کرونا ایس او پیز کو مدنظر رکھتے ہوئے رمضان میں مساجد و امام بارگاہوں میں عبادات کا طریقہ کار وضع کر دیا۔

محکمہ داخلہ کے نوٹیفکیشن کے مطابق نمازیوں کے درمیان 6 فٹ کا فاصلہ لازمی قرار دیا گیا ہے جبکہ 50 سال سے زائد عمر اور کم عمر کے بچوں کو آنے اجازت نہيں ہوگی۔

مذہبی مقامات میں ماسک کا استعمال لازمی قرار دیا گیا ہے جبکہ بخار اور کھانسی کی علامات ظاہر ہونے پر مساجد وامام بارگاہوں میں آنے کی ممانعت ہوگی۔

عمل درآمد نہ کرنے کی صورت میں مساجد و امام بارگاہ انتظامیہ کے خلاف کارروائی ہوگی۔

نمازوں اور تراویح کیلئے مساجد کھلی رکھنے کا فیصلہ

واضح رہے کہ گزشتہ سال رمضان المبارک میں ملک بھر میں مکمل لاک ڈاؤن تھا اور مساجد و امام بارگاہوں کے لیے ایس او پیز بنائی گئی تھی۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر نے دو ہفتے قبل یکم اپریل کو رمضان المبارک میں نماز اور تراویح کے لیے مساجد کھلی رکھنے کا فیصلہ کیا تھا۔

این سی او سی کا کہنا تھا کہ رمضان المبارک میں مساجد نمازوں اور تراویح کیلئے کھلی رہیں گی تاہم ایس او پیز کے تحت ہی عبادات کی اجازت ہوگی۔

اس سے قبل بھی وفاقی وزیر مذہبی امور نور الحق قادری نے ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ رواں سال رمضان المبارک کے دوران مسجدیں عبادات کیلئے کھلی رہیں گی۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

اسلام آباد اور خیبر پختونخوا میں زلزلے کے جھٹکے

اسلام آباد اور خیبر پختونخوا میں زلزلے کے جھٹکے

Sindh-High-Court-1

کتوں کی بہتات، ویکسین کی عدم دستیابی: انتظامیہ سےجواب طلب