in

مطالبات کی عدم منظوری پرعید سڑک پرمنائیں گے، قبائلی عمائدین

مطالبات کی عدم منظوری پرعید سڑک پرمنائیں گے، قبائلی عمائدین

شمالی وزیرستان سے تعلق رکھنے والے محسود قوم کے عمائدین کا دھرنا خیبرپختونخوا اسمبلی کے باہر 4 دن سے جاری ہے۔ شرکاء کا کہنا ہے کہ ملک کے امن کی خاطر نقل مکانی کی تھی، باعزت واپسی کیلئے اقدامات کئے جائیں۔ عمائدین نے اعلان کیا کہ اگر مطالبات منظور نہ ہوئے تو رمضان میں یہیں بیٹھے رہیں گے اور عید بھی سڑک پر ہی منائیں گے۔

پشاور میں خیبرپختونخوا اسمبلی کے باہر دھرنے میں شریک شمالی وزیرستان کے رہائشی سعدالدین کا کہنا ہے کہ ہمارا مطالبہ ہے کہ دہشتگردی کیخلاف آپریشن میں متاثرہ مکانات کے ساتھ متاثرہ بازاروں کا معاوضہ بھی دیا جائے، شمالی وزیرستان کے علاوہ باقی تمام اضلاع میں لوگوں کو بحالی کے سلسلے میں معاوضہ مل چکا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہمارا دوسرا مطالبہ یہ ہے کہ ان علاقوں کو بھی سروے میں شامل کیا جائے، جہاں اب تک کسی قسم کا سروے سیکیورٹی خدشات کے باعث نہیں کیا جاسکا۔

سعد الدین کا کہنا تھا کہ ہمارا تیسرا مطالبہ یہ ہے کہ سروے کیلئے 2016ء کا طریقۂ کار دوبارہ شروع کیا جائے، 2019ء میں پرانا طریقۂ کار تبدیل کیا گیا جس کے تحت لوگوں کی رجسٹریشن دستاویزات پشاور جاتی ہیں، وہاں رجسٹریشن دستاویزات پر مختلف اعتراضات لگائے جاتے ہیں جس سے سروے کا عمل مزید سست ہوگیا ہے۔

دھرنا شرکاء کی قیادت کرنیوالے شیرپاؤ محسود ایڈووکیٹ نے سماء ڈیجیٹل کو بتایا کہ ہم نے ملک کے امن کیلئے دہشتگردی کیخلاف آپریشن کے وقت اپنے علاقوں سے ہجرت کی مگر 10 سال بعد واپسی کے بعد ہمارے مکان مسمار ہوچکے تھے اور علاقہ کھنڈرات کا منظر پیش کررہا تھا، حکومت ہمارے نقصانات کا ازالہ کرے اور ہمیں مناسب معاوضہ دے تاکہ ہم اپنے گھر بناسکیں۔

ان کا کہنا تھا کہ حکومت کی طرف سے جن لوگوں کو امدادی رقم ملی، وہ بھی صرف 4 لاکھ روپے ہے، مکانات بنانے کیلئے یہ رقم ناکافی ہے، رقم کو بڑھایا جائے تاکہ لوگ دوبارہ اپنے علاقوں میں آباد ہوسکیں۔

 شیرپاؤ محسود ایڈووکیٹ کے مطابق جن لوگوں کے نام سروے میں کلیئر ہوچکے ہیں، ان کو بھی ادائیگی کا سلسلہ بظاہر منقطع ہے، ادائیگیوں کا سلسلہ تیز کیا جائے۔

ان کا کہنا تھا کہ علاقے میں اسکولز اور اسپتال بھی دہشتگردی کیخلاف جنگ میں متاثر ہوئے تھے، حکومت کو اس طرف بھی توجہ دینے کی ضرورت ہے۔

دھرنے میں شریک ایک بزرگ جاوید عالم کا کہنا ہے کہ ہمارا تعلق کسی سیاسی جماعت سے نہیں، ہم یہاں صرف مظلوموں کو انصاف دلانے کیلئے بیٹھےہیں، تقریباً 60 ہزار لوگ ایسے ہیں جن کو رجسٹریشن کے باوجود معاوضہ نہیں ملا۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

ڈالر کی قیمت میں مزید کمی، آج کے کرنسی ریٹ

اوپن مارکیٹ میں ڈالر مزید سستا، آج کے کرنسی ریٹ

معروف ٹک ٹاکرز کی شادی کے بعد نئی ویڈیوز وائرل

معروف ٹک ٹاکرز کی شادی کے بعد نئی ویڈیوز وائرل