in

سپریم کورٹ:رفاعی پلاٹوں پرقائم شادی ہالزسےمتعلق کیس،فیصلہ محفوظ

سپریم کورٹ:رفاعی پلاٹوں پرقائم شادی ہالزسےمتعلق کیس،فیصلہ محفوظ

 

سپریم کورٹ نے کورنگی میں شادی ہالز مسمار کرنے کے خلاف درخواست کی سماعت کے دوران عدالت نے وکلا کے دلائل مکمل ہونے پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔عدالت عظمی نے ریمارکس دیئے کہ اگراس طرح رہائشی پلاٹس کمرشل میں تبدیل کرتے رہے تو پورا شہر کمرشلائز ہوجائے گا اور کراچی کا حلیہ ہی بدل جائے گا۔

جمعہ کو ہونے والی سماعت میں شادی ہالز کے وکيل انورمنصور نےعدالت کو بتايا کہ قانون کے مطابق کمیٹی نے رہائشی پلاٹس کو کمرشل کرنے کی منظوری دی۔جسٹس اعجاز الاحسن نے ريمارکس ديے کمرشلائزیشن کا بھی کوئی طریقہ کار ہوتا ہے،ایسا تو نہیں ہوسکتا کہ کمیٹی کہہ دے اور آدھا کراچی کمرشلائز کردیا جائے۔

وکيل شادی ہالز کے مطابق ٹاؤن پلاننگ میں وقتاً فوقتاً زمین کی حیثیت تبدیل کی جاتی ہے۔عدالت نے ریمارکس دئیے کہ رہائشی زمین تو ڈیڑھ سو سال تک رہائشی ہی رہتی ہےاوررہائشی علاقے میں پانی اور دیگر سہولیات اسی کے مطابق دی جاتی ہیں۔ماسٹر پلان میں رہائشی علاقوں کے مطابق سہولیات ہوتی ہیں۔شادی ہالز کے وکيل نے بتايا کراچی کے 26 علاقوں کو کمرشل کیا گیا ہے۔

گذشتہ روز ہونے والی سماعت میں سپریم کورٹ نے رفاعی پلاٹوں پرقائم شادی ہالز کے خلاف کارروائی جاری رکھنے کا حکم دیا تھا۔ کمشنر کراچی نے عدالت کو بتایا تھا کہ غیر قانونی شادی ہالز مسمار کردیئے گیے ہیں۔ عدالت نے کمشنر کو تمام علاقوں میں کارروائی کا اختیار دے دیا۔

شادی ہالز کے وکیل انور منصور نے عدالت کو ایس بی سی اے سے منظور کردہ دستاویز دکھائیں توعدالت نے ریمارکس دئیے کہ آپ ایس بی سی اے کی اپروول دکھا رہے ہیں لیکن اس اپررول کی حیثیت کیا ہے۔کیا ایس بی سی اے کے پاس رہائشی پلاٹ کو کمرشل کرنے کا کیا اختیار ہے اور یہ سب جعلی کاغذات نکلے ہوئےہیں۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

کم کارڈیشین کے اثاثوں کی مجموعی مالیت ایک ارب ڈالر سے تجاوز کر گئی

کم کارڈیشین کے اثاثوں کی مجموعی مالیت ایک ارب ڈالر سے تجاوز کر گئی

Electricity

نیپرا نے 12پاور پلانٹس کےٹیرف میں کمی کی منظوری دیدی