in

ڈینیل پرل قتل کیس،ملزمان کی بریت نہ ہونے پر توہین عدالت کی کارروائی

ڈینیل پرل قتل کیس،ملزمان کی بریت نہ ہونے پر توہین عدالت کی کارروائی

سندھ ہائی کورٹ نےکہا ہےکہ امریکی صحافی ڈینیل پرل قتل کیس کےمرکزی ملزم احمدعمرشیخ اوردیگر کوبریت کے باوجود رہا نہ کرنے پراگر معاملہ سپریم کورٹ میں ہے تو سپریم کورٹ کا حکم ہی نافذ ہوگا۔

بدھ کوسندھ ہائی کورٹ میں ڈینیل پرل قتل کیس میں احمد عمر شیخ اور دیگر ملزمان کی بریت کے باوجودعدم رہائی کےمعاملے پرہوم سیکریٹری اور جیل حکام کے خلاف توہین عدالت کی درخواست کی سماعت ہوئی۔

ایڈوکیٹ جنرل نےعدالت کوبتایا کہ سپریم کورٹ نےستمبر2020 ميں آئندہ سماعت تک ملزمان کورہا نہ کرنے کاحکم دياتھا۔عدالت نےریمارکس دئیےکہ اگرمعاملہ سپریم کورٹ میں ہےتوسپریم کورٹ کا حکم ہی نافذ ہوگا۔

ایڈوکیٹ جنرل نےعدالت کوبتایا کہ ملزمان سپریم کورٹ میں حکم کو واضح کرنے کیلئے درخواست دائر کرچکے ہیں،ملزمان نے سندھ ہائی کورٹ میں بھی توہین عدالت کی درخواست دائر کردی۔

معاون وکیل نے بتایا کہ احمدعمر شیخ کے وکیل مصروف ہیں اس لئےسماعت ملتوی کی جائے۔سندھ ہائی کورٹ نے کیس کی سماعت 3 فروری تک ملتوی کردی جبکہ جیل اور پولیس حکام کو بھی آئندہ سماعت پر پیش ہونے کا حکم دیا۔

واضح رہےکہ 24 دسمبر 2020 کو سندھ ہائی کورٹ نے امریکی صحافی ڈئینیل پرل قتل کیس میں احمد عمر شیخ سمیت 4 ملزمان کی نظر بندی کا نوٹیفکیشن کالعدم قرار دیتے ہوئے ملزمان کو فوری طور پر جیل سے رہا کرنے کا حکم دیا تھا تاہم جیل حکام کی جانب سے ضروری قانونی چارہ جوئی نہ ہونے کے باعث ایسا ممکن نہ ہوسکا۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

ایمان علی اور فرحان سعید کے بولڈ فوٹو شوٹ کے چرچے

ایمان علی اور فرحان سعید کے بولڈ فوٹو شوٹ کے چرچے

ایم جی زیڈ ایکس کی قیمت کیا ہو گی ؟ کمپنی نے اتنی کم قیمت رکھنے کا اعلان کر دیا کہ لوگ خریدنے کیلئے لپک پڑیں گے

ایم جی زیڈ ایکس کی قیمت کیا ہو گی ؟ کمپنی نے اتنی کم قیمت رکھنے کا اعلان کر دیا کہ لوگ خریدنے کیلئے لپک پڑیں گے