in

وزیراعظم اورعوام کا ٹیلیفونک رابطہ،ماسک پہننے کی سخت تلقین

وزیراعظم اورعوام کا ٹیلیفونک رابطہ،ماسک پہننے کی سخت تلقین

عوام سے براہ راست گفتگو سے قبل قوم کے نام پیغام میں وزیراعظم عمران خان نے اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ ماسک کا استعمال ضروری کریں، کرونا کی تیسری لہر انتہائی خطرناک ہے۔

قوم کے نام اپنے پیغام میں وزیراعظم نے کہا کہ کرونا کی پہلی اور دوسری لہر میں پاکستان کو اللہ نے زیادہ نقصان سے بچایا۔ کرونا کی تیسری لہر خطرناک ہے، کوئی نہیں کہہ سکتا صورت حال کہاں تک جا سکتی ہے۔ ایسی صورت میں ہمیں زیادہ احتیاط کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ یورپ میں لوگوں کو ویکسین لگانے کے باوجود لاک ڈاوَن کیا گیا ہے، ہم لاک ڈاوَن نہیں کر رہے، فیکٹریاں بھی کھلی ہیں، اللہ نہ کرے اگر حالات زیادہ خراب ہوجائیں تو پھر ہم بھی مجبور ہوجائیں گے۔ باقی دنیا میں جہاں بھی لاک ڈاوَن لگا وہاں سب سے زیادہ غریب لوگ متاثر ہوئے۔ ماسک پہننا سب سے آسان ہے۔ ماسک لازمی پہنیں اور پہلے سے زیادہ احتیاط کریں۔

آج ہونے والے سیشن میں امبرین کی جانب سے پہلا سوال مہنگائی اور آمدنی پر کیا گیا۔ جس پر وزیراعظم نے کہا کہ گھبرانےکی بات نہیں ہم قیمتیں کنٹرول کرنےکی کوشش کررہےہیں۔ ملک میں مڈل مین کی زیادہ منافع خوری کی وجہ سے مہنگائی ہے۔ ایسا نظام لارہے ہیں کہ کسان براہ راست منڈیوں تک چیزیں پہنچائیں۔ معیشت کی بہتری کی وجہ سے روپیہ بھی مستحکم ہوا ہے۔

دوسری کال میں روبینہ نامی خاتون نے مہنگی ادویات اور سرکاری اسپتالوں کے ڈاکٹرز کے رویے پر سوال کیا، جس پر وزیراعظم نے کہا کہ ہیلتھ کارڈ کے ذریعے صحت کے شعبے میں انقلاب لارہے ہیں۔ پنجاب، گلگت بلتستان اور خیبر پختونخوا میں ہیلتھ کارڈ سے لوگ علاج کراسکیں گے، پختونخوامیں تمام خاندانوں کو ہیلتھ کارڈ دیا گیا ہے، پنجاب میں بھی تمام خاندانوں کو ہیلتھ کارڈ دیئے جارہے ہیں، ہیلتھ کارڈکی سہولت ترقی یافتہ ملکوں میں بھی نہیں۔ اس کے علاوہ ہم اوقاف ، متروکہ وقف املاک اور سرکاری زمینوں پراسپتال بنوائیں گے۔

ایک شہری کی جانب سے کرپشن اور منافع خوروں کے خلاف کارروائی پر بات کی گئی، جس کے سوال میں وزیراعظم نے کہا کہ کرپشن کے خلاف ہماری جنگ جاری رہے گی، نیب بھی ایسے اداروں اور افراد کے خلاف ایکشن لے رہا ہے۔ وزیر اعظم نے کہا کہ کرپشن ایسی کینسر ہے جو صرف پاکستان نہیں ہر غریب ملک میں پھیلا ہوا ہے، حکمرانوں کی کرپشن ملکوں کو مقروض کرتی ہے، کرپشن امیرملک کوبھی تباہ کردیتی ہے، امیر ممالک بھی کرپشن کی وجہ سے معاشی طور پر تباہ ہوجاتے ہیں، غریب ملکوں سے ہر سال ایک ہزار ارب ڈالر چوری ہوتے ہیں، ساری قوم مل کر کرپشن کا مقابلہ کرتی ہے،عمران خان اکیلے نہیں لڑسکتا۔

وزیراعظم عمران خان اس مرتبہ ریکارڈنگ کے بجائے براہ راست عوام سے بات چیت کر رہے ہیں۔

عوام آج بروز اتوار 4 اپریل کو صبح ساڑھے گیارہ بجے سے دوپہر ایک بجے تک مطلوبہ نمبر ڈائل کرکے وزیراعظم سے بات کرسکتے ہیں۔

براہ رست گفتگو کیلئے ٹیلی فون لائنز صبح 11 بج کر 30 منٹ پر کھول دی گئی ہیں۔ وزیراعظم عمران خان کی عوام سے براہ راست گفتگو کو مختلف ٹی وی چینلز پر نشر کیا جا رہا ہے۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

جوہانسبرگ: پاکستان اور جنوبی افریقہ کا دوسرا ون ڈے آج ہوگا

جوہانسبرگ: پاکستان اور جنوبی افریقہ کا دوسرا ون ڈے آج ہوگا

اہم خبر:بلاول کا مریم کو”آر یا پار” کی سیاست ختم کرنیکا مشورہ

اہم خبر:بلاول کا مریم کو”آر یا پار” کی سیاست ختم کرنیکا مشورہ