in

سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی میں 20سال پرانا ٹاؤن سسٹم ختم

سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی میں 20سال پرانا ٹاؤن سسٹم ختم

سندھ حکومت نے ایس بی سی اے میں کا 20 سال پرانا نظام تبدیل کردیا، ٹاؤن سسٹم ختم کرتے ہوئے ضلعی سطح پر افسران تعینات کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

سیکریٹری بلدیات سندھ کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن کے مطابق ایس بی سی اے میں سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی میں ٹاؤن ڈائریکٹرز کا عہدہ فوری طور پر ختم کردیا گیا ہے اور آئندہ ادارے میں ضلعی سطح پر ڈائریکٹر تعینات ہوں گے۔

سندھ لوکل گورنمنٹ آرڈیننس 2001ء کے آغاز کے ساتھ ہی کراچی کو 18 شہروں میں تقسیم کیا گیا تھا۔ جس کے بعد بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی اور دیگر تنظیمیں جیسے کراچی ڈیولپمنٹ اتھارٹی، کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ، ملیر ڈیولپمنٹ اتھارٹی اور لیاری ڈیولپمنٹ اتھارٹی سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ کراچی کے ماتحت کردیئے گئے تھے۔

اس وقت کے کراچی بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کو 18 ٹاؤنز میں تقسیم کیا گیا تھا، جس کے مطابق ہر قصبے میں ایک ڈائریکٹر ہوتا تھا جس کے ماتحت 2 سے 3 ڈپٹی ڈائریکٹر، 6 اسسٹنٹ ڈائریکٹر اور زیادہ سے زیادہ 9 سینئر بلڈنگ انسپکٹر کام کرتھے تھے۔

سندھ لوکل گورنمنٹ آرڈیننس 2001ء متعارف ہونے سے قبل ایس بی سی اے حلقوں اور زون کی بنیاد پر کام کررہا تھا، جہاں سرکل اے سے سرکل ایف تک 6 حلقے تھے۔

اب حکومت سندھ نے دوبارہ اتھارٹی کی تشکیل نو کی ہے، جو ضلعی سطح پر کام کرے گی۔ گریڈ 19 کا ایک تکنیکی آفیسر بطور ڈائریکٹر ضلع کی نگرانی کرے گا، ہر ضلع کی دیکھ بھال کرنے کیلئے بطور ڈائریکٹر 7 افسر ہوں گے۔

اسے آسان بنایا گیا ہے کہ ایس بی سی اے ایسٹ ڈائریکٹر ضلع کے تحت آنے والے تمام علاقوں کی دیکھ بھال کریں، ایس بی سی اے سینٹرل ڈائریکٹر ضلع وسطی، ایس بی سی اے ساؤتھ کے ڈائریکٹر کو اپنے دائرہ اختیار کی دیکھ بھال کرنا ہے۔ ایس بی سی اے ویسٹ کے ڈائریکٹر ضلع میں عمارت کے امور کے ذمہ دار ہوں گے جبکہ ایس بی سی اے ملیر ڈائرکٹر ضلع ملیر کا انچارج ہوگا، ایس بی سی اے کورنگی ڈسٹرکٹ ڈائریکٹر کو ضلع کورنگی کے دائرہ اختیار میں آنیوالے تمام علاقوں کی دیکھ بھال کرنا ہے اور ضلع کیماڑی میں تعمیرات کی ذمہ داری گریڈ 19 کے ایس بی سی اے آفیسر پر ہوگی۔

ایس بی سی اے میں یہ اصلاحات لانے کے ساتھ ہی ڈائریکٹرز کی تعداد 18 سے کم ہوکر 7 رہ گئی ہے جبکہ ڈپٹی ڈائریکٹرز کی تعداد 32 سے بڑھا کر 43 کردی گئی ہے، اسسٹنٹ ڈائریکٹرز کی تعداد 126 سے کم ہوکر 97 رہ گئی ہے۔

ہر ایس بی سی اے ضلعی ڈائریکٹر کے پاس 6 کے قریب ڈپٹی ڈائریکٹرز، 20 اسسٹنٹ ڈائریکٹرز اور 20 ایس بی آئیز کی افرادی قوت ہوتی ہے۔ نئے سسٹم میں ہر ایس بی سی اے ضلعی ٹیم کے پاس تقریباً 45 سے 50 افسران اور اہلکار ہوں گے۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

معروف ڈرامہ ارطغرل غازی  کے اہم کردار شوٹنگ کے دوران زخمی ہوگئے

معروف ڈرامہ ارطغرل غازی  کے اہم کردار شوٹنگ کے دوران زخمی ہوگئے

33-Lahore-areas-put-under-smart-lockdown-for-two-weeks-1

سیالکوٹ: 15 علاقوں میں اسمارٹ لاک ڈاون نافذ