in

میاں جاوید لطیف کی ضمانت ميں 6 اپريل تک توسيع

میاں جاوید لطیف کی ضمانت ميں 6 اپريل تک توسيع

لاہور سیشن کورٹ نےتفتيش مکمل نہ ہونے پرلیگی ایم این اے میاں جاوید لطیف کی ضمانت ميں  6اپريل تک توسيع کردی ہے۔

منگل کوضمانت ميں توسيع کے لئے لیگی رہنما میاں جاوید لطیف وکلاء کے ہمراہ سيشن کورٹ کے روبرو پیش ہوئے۔پوليس کی جانب سے تفتيش مکمل نہ کرنے پرعدالت نے تھانہ ٹاؤن شپ سے ريکارڈ طلب کرليا۔

مياں جاويد لطيف نےعدالت کے روبرو موقف پيش کيا کہ بے قصور ہوں اور پولیس اہلکاروں نے حقائق کے برعکس مقدمہ درج کیا۔

ضمانت ميں توسيع کے بعد ميڈيا سے گفتگو ميں جاويد لطيف نے کہا کہ پہلے ہڑتالیں اور پھراحتجاج کےبعد لانگ مارچ ہوگا،ہم نے 72 سالوں میں صرف غدار بنائے ہیں،جتنے مرضی مقدمات بنا لیں ہم قوم کی آواز بن کر دکھائیں گے۔

بیس مارچ کوسیشن کورٹ نے جاوید لطیف کی عبوری ضمانت 30 مارچ تک منظورکی تھی۔عدالت نے ن لیگی ایم این اے جاويد لطيف کوايک لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکےجمع کرانےاورمقدمےمیں شامل تفتیش ہونےکاحکم ديا تھا۔

ن لیگ کےایم این اے جاوید لطیف کے خلاف ریاست کے خلاف بغاوت پر اکسانے کا مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ میاں جاوید لطیف کے خلاف درج مقدمے میں ریاست سے بغاوت، غداری اور سائبر کرائم ایکٹ کی دفعات بھی شامل کی گئی ہیں۔ ان کے خلاف مقدمہ عام شہری کی درخواست پر تھانہ ٹاؤن شپ میں درج کیا گیا۔

ٹاؤن شپ کے رہائشی جمیل سلیم کی مدعیت میں درج کیے گئے مقدمے میں کہا گیا کہ جاوید لطیف نے ملک کی حکومت اور سالمیت کے ساتھ ریاستی اداروں کے خلاف ہرزہ سرائی کی۔ انہوں نے پیپلز پارٹی اور ن لیگ کے کارکنوں کے مابین نفرت کا بیج بویا۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

پنجابی گلوکار کار حادثے میں جان کی بازی ہار گئے 

پنجابی گلوکار کار حادثے میں جان کی بازی ہار گئے 

کینسینو ویکسین آج پاکستان پہنچے گی، اسد عمر

کینسینو ویکسین آج پاکستان پہنچے گی، اسد عمر