in

سپریم کورٹ کا این اے 75 ڈسکہ ميں 10 اپریل کو پولنگ روکنے کا حکم

سپریم کورٹ کا این اے 75 ڈسکہ ميں 10 اپریل کو پولنگ روکنے کا حکم

سپریم کورٹ نےاین اے 75 ڈسکہ ميں 10 اپریل کو پولنگ روکنے کا حکم دیا ہے۔ جسٹس عمر عطا بندیال نے ریمارکس دئیے ہیں کہ الیکشن کمیشن کا دوبارہ انتخاب کا فیصلہ برقرارہے اور فی الحال 10 اپریل کوپولنگ کا فیصلہ ملتوی کررہےہیں۔

سپریم کورٹ میں این اے75 ڈسکہ میں دوبارہ انتخاب کےکیس کی سماعت ہوئی۔ جسٹس منیب اختر نے استفسار کیا کہ جب پریزایئڈنگ افسرنکلےتورخصتی معمول کیمطابق تھی؟۔مسلم لیگ نون کے وکیل سلمان اکرم راجا نے بتایا کہ افسران پولیس کے ساتھ معمول کے مطابق نکلے اور ان کی واپسی غیرمعمولی تھی وہ اکھٹے آئے اور ڈرے ہوئے تھے۔

سلمان اکرم راجا نے عدالت کو بتایا کہ حلقے کے آدھے پولنگ اسٹیشنز کی شکایات موصول ہوئیں۔ اس پر جسٹس منیب اختر نے ریمارکس دئیے کہ ڈسکہ شہرکے76 پولنگ اسٹیشنزآدھےنہیں بنتے۔سلمان اکرم راجا نے عدالت سے معذرت کرتےہوئے کہا کہ معذرت خواہ ہوں اور 76 پولنگ اسٹیشنز ایک تہائی بنتےہیں۔جسٹس منیب اختر نے کہا کہ آدھے اور ایک تہائی میں فرق ہے،احتیاط سے دلائل دیں۔

جسٹس عمرعطا بندیال نےریمارکس دئیے کہ مسلم لیگ ن کےکارکنان نے پرتشدد واقعات شروع کیے۔ حلقے میں ن ليگ کا اثرورسوخ زیادہ تھا تو بدامنی کی ضرورت کیوں پڑی۔جسٹس عمرعطا نےاستفسار کیا کہ اگرآپ  نتائج سے خوش تھے توکوئی اعتراض نہیں اٹھایا۔سلمان اکرم راجا نے جواب دیا کہ الیکشن کے نتائج کے خلاف درخواست کمیشن میں دائر کی۔ڈسکہ شہر میں دیہات کے مقابلے میں ٹرن آؤٹ روایتی طور پر زیادہ ہے۔

سپریم کورٹ نے این اے 75 ڈسکہ کیس کی سماعت ملتوی کردی۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

پاکستان کے ٹیکنالوجی اسٹاکس میں 1 برس میں 500فیصد اضافہ

پاکستان کے ٹیکنالوجی اسٹاکس میں 1 برس میں 500فیصد اضافہ

پوچھاگیااچھےکردارکےبدلےہمیں کیادیں گی؟ صبابخاری

پوچھاگیااچھےکردارکےبدلےہمیں کیادیں گی؟ صبابخاری