in

نوازشریف کے پاسپورٹ کی تجدیدنہیں ہوسکتی، وزارت داخلہ کاخارجہ کوخط

Nawaz-Sharif_Recent-artwork_

وزارت داخلہ نے ایک خط کے ذریعے وزارت خارجہ سے کہا ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف کی جانب سے پاسپورٹ کی تجدید کیلئے آنیوالی درخواست پر کارروائی نہ کی جائے، وہ مفرور مجرم ہیں، عدالت میں پیش ہونے تک انہیں مزید کوئی ریلیف نہیں دیا جاسکتا۔

سابق وزیراعظم اور مسلم لیگ ن کے قائد نواز شريف نے پاسپورٹ کی ميعاد ختم ہونے سے ايک دن پہلے 15 فروری کو لندن ہائی کمیشن کے ذریعے حکومت سے رابطہ کيا اور پاسپورٹ تجدید کی درخواست کی تھی۔

خط ميں کہا گيا کہ پاسپورٹ 16 فروری کو ختم ہورہا ہے، تجدید کی جائے۔ لندن ہائی کمیشن نے خط وزارت خارجہ کو بھیجا جہاں سے یہ خط وزارت داخلہ تک پہنچا۔

وزارت داخلہ نے نواز شریف کے پاسپورٹ کی تجدید کی سخت مخالفت کرتے ہوئے سیکرٹری خارجہ کو جوابی خط لکھ کر تمام تحفظات سے آگاہ کیا۔

خط میں کہا گیا کہ نواز شریف مفرور مجرم ہیں، ان کیخلاف نیب کا ایک ریفرنس ہے، عدالت میں پیش ہونے تک نواز شریف کو مزید ریلیف نہیں دیا جا سکتا، اس لئے نئے پاسپورٹ کی درخواست پر کوئی کارروائی نہ کی جائے۔

وزارت داخلہ کا مؤقف ہے کہ نواز شریف کیخلاف احتساب عدالت میں توشہ خان کیس جبکہ اسلام آباد ہائیکورٹ میں بھی تین اپیلیں زیر التواء ہیں۔

وزارت داخلہ نے وزارت خارجہ کے ایڈیشنل سیکریٹری برائے یورپ سے اہم تفصیلات بھی مانگ لیں، کہا کہ سابق وزیراعظم نواز شریف کی صحت، علاج کے حوالے سے معلومات فراہم کی جائیں، برطانوی ڈاکٹرز سے موجودہ صورتحال لی جائے، ڈاکٹروں کا نام اور پتہ بھی بتایا جائے۔

وزارت داخلہ نے برطانیہ میں نواز شریف کے ہونیوالے میڈیکل ٹیسٹ اور رپورٹس، اس وقت جاری علاج اور ادائیگیوں کی تفصیلات بھی مانگی ہیں۔

خط میں مزید یہ بھی کہا گیا ہے کہ تمام مطلوبہ تفصیلات لینے کیلئے نواز شریف سے رضامندی فارم پر دستخط بھی کروائے جائیں۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

یمن: موذن چھریوں کے وار سے قتل

یمن: موذن چھریوں کے وار سے قتل

ملٹری اعزازات: 47افسران وجوانوں کوہلال امتیازملٹری، 13کوستارہ بسالت سے نوازاگیا

ملٹری اعزازات: 47افسران وجوانوں کوہلال امتیازملٹری، 13کوستارہ بسالت سے نوازاگیا