in

ہمارے رکن کو خریدکر فارن فنڈنگ کیس بنایا گیا، علی محمد خان

ہمارے رکن کو خریدکر فارن فنڈنگ کیس بنایا گیا، علی محمد خان

تحریک انصاف کے رہنما اور وفاقی وزیر برائے پارلیمانی امور علی محمد خان نے الزام عائد کیا ہے کہ اکبر ایس بابر کو خرید کر ان کے ذریعے پارٹی کے خلاف فارن فنڈنگ کیس دائر کروایا گیا مگر وہ یہ جواب نہ دے سکے انہیں کس نے خریدا۔

سماء ٹی وی کے پروگرام ندیم ملک لائیو میں نیب اور براڈشیٹ کیس سمیت تحریک انصاف کے خلاف الیکشن کمیشن میں زیر سماعت فارن فنڈنگ کیس پر مہمانوں نے گفتگو کی۔ فارن فنڈنگ کیس تحریک انصاف کے بانی رہنما اور عمران خان کے قریبی دوست اکبر ایس بابر نے دائر کیا تھا۔

ندیم ملک نے اس موقع پر جسٹس ریٹائرڈ شائق عثمانی کی رائے سنائی۔ انہوں نے گزشتہ روز سماء ٹی وی کو بتایا تھا کہ اگر فارن فنڈنگ ثابت ہوئی تو تحریک انصاف سمیت 2018 کے انتخابات کالعدم ہوجائیں گے اور حکومت ختم ہوجائے گی۔

علی محمد خان نے اس پر ناپسندیدگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ شائق عثمانی کے ساتھ وہ بے شمار پروگرامات میں شرکت کرچکے ہیں۔ وہ ہمیشہ تحریک انصاف کے خلاف بات کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ یہ فارن فنڈنگ کیس نہیں ہے۔ یہ کیس ہماری جماعت کے ایک رکن کو خرید کر بنایا گیا۔ ندیم ملک نے ان سے سوال کیا کہ اکبر ایس بابر کو کس نے خریدا۔ علی محمد خان کے پاس اس سوال کا جواب نہیں تھا۔

علی محمد خان نے کہا کہ کسی بھی آزاد جیورسٹ کو بلاکر پوچھیں کہ فارن فنڈنگ کیس میں دائرہ کار الیکشن کمیشن کا ہوتا ہے یا وفاقی حکومت سپریم کورٹ میں ریفرنس دائر کرتی ہے۔ یہ کیس ’بے قاعدگیوں‘ کا ہے۔ اس میں کچھ رقم ایسی نکل جاتی ہے جس کا آپ تسلی بخش جواب نہیں دیتے تو وہ رقم ضبط ہوجاتی ہے۔ کسی بھی جماعت کو کالعدم قرار دینے کا اختیار سپریم کورٹ کا ہے۔

ندیم ملک نے دریافت کیا کہ کتنے اکاؤنٹس یا رقم کے بارے میں بے قاعدگیوں کا الزام ہے۔ علی محمد خان اس کا جواب دینے سے بھی گریز کرتے رہے۔ اینکر نے مسلسل 15 سے 20 مرتبہ ایک ہی سوال دہرایا مگر علی محمد خان نے ایک بار بھی جواب نہیں دیا۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

شبلی فراز کا بجلی کی قیمت میں اضافے کا عندیہ

شبلی فراز کا بجلی کی قیمت میں اضافے کا عندیہ

فارن فنڈنگ کیس:ن لیگ،پیپلزپارٹی اورتحریک انصاف نے جواب جمع کرادیا

فارن فنڈنگ کیس:ن لیگ،پیپلزپارٹی اورتحریک انصاف نے جواب جمع کرادیا