in

عزیر بلوچ کی مقدمات سےبریت: گواہان کوخطرات لاحق

عزیر بلوچ کی مقدمات سےبریت: گواہان کوخطرات لاحق

لياری گينگ وار سرغنہ عزیر بلوچ قید میں بھی مقدمات پر اثرانداز ہونے لگے۔عزیر بلوچ کے مسلسل بری ہونے سے متعلق عدالت میں پراسیکیوٹر نے انکشافات کيے ہيں۔ پراسيکيوٹر کے مطابق گواہان و پراسیکیوشن کو جان سے مارنے کی دھمکیاں دی جارہی ہیں۔

جمعہ کو کراچی کی سيشن عدالت ميں دوران سماعت پراسيکيوٹر نےبتايا کہ جولائی 2005 میں ماڑی پور سےعزیر بلوچ اور اس کے ساتھی کو گرفتار کیا گیا تھا۔ گزشتہ برس مقدمے کے اہم گواہ آئی او شہاب حیدر کو لیاری گینگ وار نے قتل کردیا۔

سرکاری وکيل نےبتايا کہ دیگر گواہان  کو بھی دھمکیاں دی جارہی ہیں۔عدالتی عملے اور پراسکیوشن کو عذیر بلوچ اور لیاری گینگ وار سے جان کا خطرہ ہے۔ملزمان کے خوف سے گواہان گواہی کےلئے پیش نہیں ہورہے۔

سرکاری وکيل نے کہا کہ گواہان پراسیکیوشن اور عدالتی عملے کو تحفظ فراہم کیا جائے۔عدالت مقدمہ میں شواہد پیش کرنے کی مہلت دے۔ کیس پراپرٹی سٹی مال خانے میں جل گئیْ ہے یا کہیں اور ہے۔ اس حوالے سے کچھ کہنا قبل ازوقت ہوگا۔

وکیل سرکار نے مقدمہ میں کیس پراپرٹی پیش کرنے کی مہلت مانگ لی۔عدالت نے آئندہ سماعت تک کیس پراپرٹی پیش کرنے کی آخری مہلت دے دی۔

جمعرات کو کراچی کی مقامی عدالت نے عزیر بلوچ کو ایک ہی دن میں دو مقدمات میں بری کردیا تھا۔

عدالت نے ریمارکس دیے کہ استغاثہ پولیس حملہ کیس میں بھی شواہد پیش کرنے میں ناکام رہا۔عزیر بلوچ پر 2012 میں پولیس کی بکتربند پرحملے کامقدمہ درج کیاگیاتھا۔عزیربلوچ کو کلری تھانہ حملہ کیس میں بھی بری کیاگیاہے۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

راکھی ساونت کی بچپن کی تصاویرپرتبصرہ کریں

راکھی ساونت کی بچپن کی تصاویرپرتبصرہ کریں

کراچی: ہیڈماسٹرز کااحتجاج، وزیراعلیٰ ہاؤس جانے کی کوشش، خاتون بیہوش

کراچی: ہیڈماسٹرز کااحتجاج، وزیراعلیٰ ہاؤس جانے کی کوشش، خاتون بیہوش