in

اورنگی نالے کے اطراف ڈھائی ہزار گھر زد میں آئیں گے

اورنگی نالے کے اطراف ڈھائی ہزار گھر زد میں آئیں گے

این ای ڈی یونیورسٹی نے سندھ حکومت کو سروے رپورٹ جمع کرائی ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ اورنگی نالے کے اطراف 30 فٹ کے اندر 2600 سے زائد مکانات اور دیگر عمارتیں تعمیر ہوچکی ہیں۔

یہ سروے رپورٹ این ای ڈی یونیورسٹی کی ٹیم نے اورنگی نالہ کے ہائیڈروولوجک اور ہائیڈرولک معائنہ کے بعد پیش کی ہے۔ یونیورسٹی کے ماہرین کراچی کے تمام برساتی نالوں پر تحقیق کر رہے ہیں۔

گزشتہ برس اگست میں کراچی میں تباہ کن بارشوں کے بعد جب شہر مفلوج ہوگیا تو اس کے بعد وزیراعلیٰ نے این ای ڈی یونیورسٹی کے ماہرین کو نالوں کے بارے میں تحقیق کی ذمہ داری سونپی۔ سپریم کورٹ نے بھی نالوں سے تجاوزات کے خاتمے کا حکم دیا ہے۔

اورنگی نالہ کراچی کے تین بڑے نالوں میں سے ایک ہے جس کی لمبائی 11 کلومیڑ ہے اور انتہائی گنجان علاقوں سے گزرتا ہے۔

این ای ڈی یونیورسٹی کی ٹیم نے نالے کی چوڑائی اور گہرائی کا مطالعہ کرنے کے لئے گلوبل نیویگیشن سیٹلائٹ سسٹم سروے کیا جبکہ روٹ کی میپنگ کیلیے ڈرون کیمرہ استعمال کیا گیا۔ میپنگ سے واضح ہوا کہ نالے کا ’کیچمنٹ یا کلیکشن ایریا‘ 30.8 مربع کلومیٹر ہے۔ اس سے بارش کے پانی کا بہاؤ زیادہ سے زیادہ 45439 مکعب فٹ فی سیکنڈ پیدا ہوسکتا ہے۔ اگر اگست میں ہونے والی 270 ملی میٹر بارش کو دیکھا جائے تو 12 گھنٹے کے دوران نالے میں بارش کے پانی کا بہاؤ 12700 مکعب فٹ فی سیکنڈ ہوتا۔

اگر حکومت اورنگی نالہ کے دونوں طرف 30 فٹ حصہ صاف کرنا چاہتی ہے تو 2656 مکانات اور عمارتیں اس کی زد میں آئیں گے۔ ان میں سے 1703 عمارتوں کا آدھا حصہ توڑنا پڑے گا جبکہ دیگر کے بعض حصے مسمار ہوں گے۔

این ای ڈی کی ٹیم پہلے ہی محمود آباد، منظور کالونی نالے کا سروے کر چکی ہے جہاں 238 مکانات اور دکانوں کے مختلف حصے توڑے جائیں گے۔ اس پر کام شروع ہوچکا ہے جبکہ اس اگلی باری اورنگی اور گجر نالے کی ہے۔

محکمہ موسمیات کے مطابق پچھلے سال شہر میں بارشوں کا 90 سالہ ریکارڈ ٹوٹ گیا تھا جس نے کراچی کو کئی دن تک مفلوج رکھا جس کے باعث حکومت بھی کافی دباؤ میں آگئی تھی۔ حکومت کا خیال ہے کہ شہر کے تمام 44 برساتی نالے کچرا بھرنے سے بند ہوگئے ہیں۔ ان کی صفائی کی ضرورت ہے جبکہ نالوں پر تجاوزات کے خلاف بھی کارروائیاں جاری ہیں جس میں ایف ڈبلیو او اور این ڈی ایم اے بھی سندھ حکومت کی مدد کر رہے ہیں۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

شکارپور: موبائل فون پر خونیں تصادم، 5افراد قتل، 8زخمی

شکارپور: موبائل فون پر خونیں تصادم، 5افراد قتل، 8زخمی

پب جی گیم پر دوستی13 سالہ بچہ اغوااور زیادتی کے بعد قتل کردیا گیا

پب جی گیم پر دوستی13 سالہ بچہ اغوااور زیادتی کے بعد قتل کردیا گیا