in

وفاق نے آئی جی سندھ کیلئے 3 نام تجویز کردیئے

وفاق نے آئی جی سندھ کیلئے 3 نام تجویز کردیئے

آئی جی سندھ مشتاق مہر کے معاملے پر سندھ اور وفاق کے درمیان تنازع شدت اختیار کرگیا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ وفاقی حکومت نے انسپکٹر جنرل سندھ کے عہدے کیلئے صوبائی حکومت کو 3 نام تجویز کردیئے۔

سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حلیم عادل شیخ کی گزشتہ ہفتے گرفتاری کے بعد وفاق اور سندھ حکومت کے درمیان اختلافات سامنے آئے۔ ان پر الزام تھا کہ انہوں نے انتخابی عمل میں رکاوٹ ڈالنے اور میمن گوٹھ میں انسداد تجاوزات آپریشن میں مداخلت کی تھی۔

گورنر سندھ عمران اسماعیل نے پیر کو پریس کانفرنس میں بتایا تھا کہ وزیراعظم عمران خان کو معاملے پر خط لکھا گیا ہے، جس میں آئی جی سندھ کو فوری طور پر عہدے سے ہٹانے کا مطالبہ بھی کیا گیا ہے۔ انہوں نے سندھ میں ایک ایسے پولیس سربراہ کی خواہش کی جو کسی کے تابع نہ ہو۔

ذرائع کے مطابق وفاق کی جانب سے سندھ پولیس چیف کیلئے جو نام تجویز کئے گئے ہیں ان میں ڈی جی ایف آئی اے واجد ضیاء، آئی جی خیبرپختونخوا ڈاکٹر ثناء اللہ عباسی اور سابق آئی جی بلوچستان معظم جاہ انصاری شامل ہیں۔

البتہ سندھ حکومت نے وفاق کی جانب سے آئی جی سندھ کیلئے مجوزہ ناموں سے متعلق خط ملنے کی تردید کردی۔

وزیراعلیٰ سندھ کے مشیر برائے قانون مرتضیٰ وہاب نے سماء ڈیجیٹل کو بتایا کہ سندھ حکومت کو وفاق کی جانب سے آئی جی کی تقرری کے حوالے سے اب تک کوئی نام موصول نہیں ہوئے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ اگر وفاقی حکومت نے آئی جی سندھ کی تبدیلی کے حوالے سے کوئی اقدام کیا تو سندھ کابینہ میں اس معاملے پر غور کیا جائے گا۔

اپوزیشن کے اراکین نے بھی سندھ اسمبلی میں ایک قرارداد پیش کی ہے جس میں آزادانہ و منصفانہ طور پر اپنے فرائض انجام نہ دینے پر آئی جی سندھ مشتاق مہر کی برطرفی کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

آئی جی سندھ نے سماء ڈیجیٹل سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ سندھ پولیس نے صرف الیکشن کمیشن کی ہدایت پر حلیم عادل شیخ کو گرفتار کیا۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

پاکستان سے بھیجی گئی ڈیڑھ ٹن ہیروئن نیدرلینڈمیں پکڑی گئی

پاکستان سے بھیجی گئی ڈیڑھ ٹن ہیروئن نیدرلینڈمیں پکڑی گئی

سینیٹ انتخابات، کاغذات واپس لینے کی آج آخری تاریخ

سینیٹ انتخابات، کاغذات واپس لینے کی آج آخری تاریخ