in

موٹروے ریپ کیس: 200صفحات پر مشتمل چالان عدالت میں جمع

موٹروے ریپ کیس: 200صفحات پر مشتمل چالان عدالت میں جمع

لاہور پوليس نے موٹر وے ریپ کیس کا 200 صفحات پر مشتمل چالان انسداد دہشت گردی عدالت میں جمع کراديا۔

عدالت کے روبرو جمع کرائے گئے چالان میں متاثرہ خاتون، مقدمے کے مدعی اور 15 پر کال کرنیوالے شخص سميت 40 گواہان کو شامل کیا گیا ہے تاہم سانحے کے وقت موقع پر موجود 3 بچوں کو گواہوں کی لسٹ میں شامل نہیں کیا گیا۔

ملزم شفقت عرف بگا نے جوڈیشل مجسٹریٹ رحمان الٰہی کے روبرو دفعہ 164 کا بیان ریکارڈ کرواتے ہوئے اقبال جرم کرلیا ہے۔

دوسری جانب ملزم عابد ملہی نے تفتیشی افسر کے روبرو اعتراف جرم کیا اور دفعہ 161 کا بیان ریکارڈ کروایا، ملزم عابد ملہی نے خاتون کو 2 مرتبہ جبکہ شفقت نے ايک مرتبہ ریپ کا نشانہ بنایا۔

چالان ميں کہا گيا ہے کہ ملزمان عابد ملہی اور شفقت کا ڈی این اے میچ کرچکا ہے، اب ملزمان کیخلاف انسداد دہشت گردی عدالت کے جج ارشد حسین بھٹہ جیل ميں ٹرائل کا آغاز کريں گے۔

واضح رہے کہ 9 ستمبر 2020ء کی رات ایک خاتون اپنے کم سن بچوں کے ساتھ لاہور سے براستہ سیالکوٹ موٹروے گوجرانوالہ جا رہی تھی کہ راستے میں پیٹرول ختم ہوگیا، اس دوران 2 ملزمان آئے اور خاتون کو بچوں سمیت قریبی کھیتوں میں لے گئے جہاں ملزمان نے پہلے خاتون کو ریپ کا نشانہ بنایا اور قیمتی سامان بھی لوٹ کر فرار ہوگئے، جس میں ایک لاکھ نقدی، زیورات اور ڈیبٹ کارڈ و دیگر اہم اشیاء شامل تھیں۔

واقعے میں ملوث ایک ملزم شفقت عرف بگا نے خود ہی گرفتاری دیدی تھی جبکہ دوسرا ملزم عابد ملہی ایک ماہ تک روپوش رہا اور آخر کار فیصل آباد سے گرفتار ہوگیا تھا۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

پاکستان سپرلیگ: کب کیا ہوا

پاکستان سپرلیگ: کب کیا ہوا

خشک سالی کا خطرہ، کوئٹہ میں نماز استسقاء کی ادائیگی

خشک سالی کا خطرہ، کوئٹہ میں نماز استسقاء کی ادائیگی