in

فارن فنڈنگ کیس میں حکومت ختم ہوسکتی ہے، سابق جسٹس

فارن فنڈنگ کیس میں حکومت ختم ہوسکتی ہے، سابق جسٹس

الیکشن غیرقانونی قرار پائیں گے

سپریم کورٹ کے سابق جسٹس شائق عثمانی نے کہا ہے کہ اگر تحریک انصاف کے خلاف غیرقانونی فنڈنگ ثابت ہوجائے تو 2018 کے الیکشن غیرقانونی قرار پائیں گے اور حکومت ختم ہوجائے گی۔

سماء ٹی وی کے اینکر پرسن ندیم ملک سے گفتگو کرتے ہوئے جسٹس ریٹائرڈ شائق عثمانی کہا کہ ماضی کے انتخابات میں تحریک انصاف کی ایک سیٹ ہوتی تھی اور اس کی بڑی وجہ پیسے کی کمی تھی۔ جب 2013 کے الیکشن ہوئے تو ہم نے دیکھا کہ تحریک انصاف کے پاس بے انتہا پیسہ آگیا اور وہ اسے استعمال کرتے رہے۔ اب یہ معلوم نہیں کہ یہ پیسہ کہاں سے آیا۔

انہوں نے کہا کہ ’ظاہر ہے کہ یہ فنڈنگ اندرون ملک سے نہیں ہوئی کیوں کہ ملک کے اندر ڈونرز اس پارٹی کو فنڈ دیتے ہیں جن کا اقتدار میں آنے کا امکان ہو اور تحریک انصاف کا ایسا کوئی امکان نہیں تھا۔ اس لیے یہ سارا پیسہ باہر سے آیا ہے۔‘

جسٹس شائق عثمانی نے اپنے موقف کی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ باہر سے پیسہ آنا کوئی غلط کام نہیں اگر وہ قانونی طریقے سے ہو۔ جو پاکستانی باہر رہتے ہیں، وہ پاکستان میں پارٹی کو فنڈ دینا چاہیں تو اس میں کوئی برائی نہیں۔ لیکن اگر فنڈ کا سورس غیرقانونی ہو اور پتہ ہی نہ ہو کہ کہاں سے آیا ہے تو یہ پارٹی کیلئے بڑا خطرہ ہے۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

نیو لائف ڈویلپرز ڈی ایچ اے لاہور میں رہائشی اپارٹمنٹس پراجیکٹ کیلئے معاہدہ طے پاگیا

نیو لائف ڈویلپرز ڈی ایچ اے لاہور میں رہائشی اپارٹمنٹس پراجیکٹ کیلئے معاہدہ طے پاگیا

بیوی ہی شوہر کے قتل میں ملوث نکلیپولیس نے ملزمہ کو ساتھی سمیت گرفتار کرلیا

بیوی ہی شوہر کے قتل میں ملوث نکلیپولیس نے ملزمہ کو ساتھی سمیت گرفتار کرلیا