in

کیا ایچ آئی وی میں مبتلا بچوں کوویکسین دینی چاہیے؟

کیا ایچ آئی وی میں مبتلا بچوں کوویکسین دینی چاہیے؟

طبی ماہرین نے ایچ آئی وی میں مبتلا بچوں کے دیگر بیماریوں کا علاج روکنے کی تجویز نہیں دی۔

یونیسیف سندھ سے تعلق رکھنے والے ڈاکٹر ایاز حسین نے کراچی میں ایڈز پر میڈیا رپورٹنگ کے موضوع پر ورکشاپ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ایسے بچوں جن کا ایچ آئی وی ٹیسٹ مثبت آیا ہو انہیں متعدی بیماریوں سے بچاؤ کی ویکسین دی جاسکتی ہے۔

ای پی آئی (ایکسپینڈڈ پروگرام آف امیونائزیشن) میں بچوں کو جن بیماریوں سے بچاؤ کی ویکسین دی جاتی ہے ان میں تپ دق، اسہال، ڈائریا، ہیپاٹائٹس بی، خسرہ، میننگیٹس، پرٹیوسس (کھانسی)، نمونیا، پولیو، تشنج اورایکس ڈی آر ٹائیفائڈ شامل ہیں۔

ایچ آئی وی کیلیے کوئی ویکسین کیوں نہیں ہے؟

ڈاکٹر راجوال خان اسٹریٹجک انفارمیشن ایڈوائزر یو این ایڈز کا کہنا ہے کہ ایچ آئی وی ایک حیرت انگیز حد تک پیچیدہ وائرس ہے جو تیزی سے اور اکثر تبدیل ہوتا رہتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ فی الحال ، ایچ آئی وی کے لئے کوئی ویکسین موجود نہیں ہے لیکن سائنس دان اس پر کام کر رہے ہیں۔ اب تک 40 سے زیادہ ویکسین تیار کی جاچکی ہیں تاہم کوئی بھی کارگر ثابت نہیں ہوئی۔

کیا ایچ آئی وی ایڈز جیسا ہی ہے؟

ہیومن امیونوڈیفینیسی وائرس (ایچ آئی وی) اور ایکوائرڈ امیون ڈیفینسسی سنڈروم (ایڈز) جیسا بلکل نہیں ہے۔

ایچ آئی وی ایک ایسا وائرس ہے جو انفیکشن کا سبب بن سکتا ہے۔ ایڈز متعدد شرائط کا ایک سنڈروم ہے جو ایچ آئی وی انفیکشن کی وجہ سے بھی تیار ہوسکتا ہے۔ ایچ آئی وی انفیکشن قابل علاج ہے لیکن ایڈز کا کوئی علاج نہیں ہے۔

کیا آپ اپنا ایچ آئی وی علاج روک سکتے ہیں؟



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

واٹربورڈ سے سستا واٹر ٹینکر منگوانے کا طریقہ

واٹربورڈ سے سستا واٹر ٹینکر منگوانے کا طریقہ

پہلا ٹی20: جنوبی افریقہ کو جیت کیلیے 170رنز کا ہدف

پہلا ٹی20: جنوبی افریقہ کو جیت کیلیے 170رنز کا ہدف