in

محمدزبیر کی بیٹی وداماد کی ویکسینیشن، سندھ حکومت کا نوٹس

Muhammad Zubair

سابق گورنر محمد زبیر کی بیٹی اور داماد کی جانب سے کرونا ویکسین لگوانے پر سندھ حکومت نے نوٹس لیتے ہوئے ڈپٹی ڈسڑکٹ ہیلتھ افسر کو معطل کر دیا۔

دونوں نے ويکسینيشن کے بعد تصاوير سوشل ميڈيا پر شيئر کی تھيں۔ تصاوير سامنے آنے پر وزير صحت عذرا پيچوہو نے نوٹس ليا۔

وزیر صحت سندھ نے تحقیقاتی کمیٹی قائم کر دی جوکہ تین روز میں رپورٹ پیش کرے گی۔ دیگر سینٹرز سے بھی چند من پسند افراد کو ویکسین لگانے کا انکشاف ہوا ہے۔

سماء سے گفتگو میں وزیر اطلاعات و نشریات شبلی فراز کا کہنا تھا کہ محمد زبير نے فيملی کو پرائيوٹ ويکسين لگائی ہے تو حرج نہيں لیکن اگر لگائی گئی ويکسين سرکاری تھی تو يہ درست عمل نہيں۔

شبلی فراز کا کہنا تھا کہ غريبوں کی باتيں کرنے والی ليگی قيادت نوازتی اپنوں کو ہی ہے۔

دوسری جانب واقعے پر اين سی او سی کے سربراہ اور وفاقی وزير برائے منصوبہ بندی اسد عمر نے ٹویٹ کرتے ہوئے لکھا کہ شکایت ملی کہ کراچی ميں ویکسین جان پہچان والوں کو لگائی جا رہی ہے۔

اسد عمر نے لکھا کہ کراچی میں ويکسين ہیلتھ کیئر ورکرز کے علاوہ ديگر افراد کو لگائی گئی جس پر اين سی او سی نے فوری نوٹس لیا اور ٹيم نے سندھ حکومت کے نمائندوں سے ملاقات کی۔ ڈاکٹر فيصل سلطان نے سندھ حکومت کو صرف ہیلتھ ورکرز کو ویکسین دینے کی تاکید کی ہے۔

واضح رہے کہ این سی او سی کی ایس او پیز کے تحت پہلے مرحلے میں کرونا ویکسین صرف فرنٹ لائن ہیلتھ ورکرز کو دی جانی ہے۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Maryam Nawaz talk with angry mood

مریم نواز کی بڑی بیٹی حادثے میں زخمی

رضا ربانی نے کابینہ کو نابینا قرار دے دیا

رضا ربانی نے کابینہ کو نابینا قرار دے دیا