in

لاہور: چڑیا گھر میں سفید ٹائیگر کے 2 بچے مرگئے

لاہور: چڑیا گھر میں سفید ٹائیگر کے 2 بچے مرگئے

لاہور کے چڑیا گھر میں موجود سفید ٹائیگر کے مزید 2 بچے ہلاک ہوگئے۔

لاہور کے چڑیا گھر انتظامیہ کے مطابق دونوں بچے وائرل انفکیشن کا شکار ہوئے۔ جانوروں کے بچوں میں موسمی تبدیلی سے پیدا ہونے والے وائرل انفکیشن کو برداشت کرنے کی قوت بڑے جانوروں کے مقابلے میں کم ہوتی ہے۔  انتظامیہ کا کہنا تھا کہ یہ ہی وجہ سے ایک دم لاہور کا موسم تبدیل ہونے پر سفید ٹائیگر کے بچوں کی صحت اسے برداشت نہ کرسکی۔

واضح رہے کہ لاہور کے چڑیا گھر میں موجود سفید ٹائیگر کے ہاں 3 ماہ قبل 3 بچوں کی پیدائش ہوئی تھی، تاہم پیدائش کے وقت ایک بچہ کمزوری کے باعث مر گیا تھا۔

ذرائع کے مطابق بچوں کے مرنے کی وجہ فنڈز کی کمی بھی ہے۔ کم فنڈز کے باعث سرد موسم میں بچوں کی مناسب نگہداشت نہ ہوسکی اور بیمار ہونے پر انتظامیہ مناسب علاج بھی نہ کرواسکی۔

بچوں سے متعلق چڑیا گھر حکام نے بتایا کہ پیدائش کے وقت یہ دونوں بچے تندرست تھے۔ بچوں کو نرسری میں رکھا گیا تھا اور وہ صحت مند تھے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل سپریم کورٹ میں دائر درخواست میں اس بات کا انکشاف کیا گیا تھا کہ پشاور کے چڑیا گھر میں 9 ماہ کے دوران جانوروں کی دیکھ بھال کے مناسب انتظامات نہ ہونے باعث 18 جانور ہلاک ہوئے۔ مرنے والے جانوروں میں 9 نر اور 9 مادائیں شامل تھیں۔ جب کہ 3 جنگلی بلیاں مناسب پنجرہ نہ ہونے کے باعث مرگئی تھیں۔ دوسرے جانوروں کے حملے کے باعث ایک ہرن بھی مارا گیا تھا۔

پشاور ہی کے چڑیا گھر میں جال سے سر ٹکرانے کے باعث زیبرے کی موت واقعہ ہوئی، جب کہ ایک ریچھ دوسرے ریچھ کے حملے کے دوران مرگیا۔ اسی طرح پنجرے سے سر ٹکرانے کے باعث مارخور کی ہلاکت بھی ہوئی۔ ایک چیتا اور 3 زرافہ بھی جگر اور ڈائریا کی بیماریوں سے موت کا شکار ہوئے جب کہ لکڑ بھگا ٹیومر کے باعث زندگی کی بازی ہار گیا۔

گزشتہ سال 2020 دسمبر میں بہاولپور کے چڑیا گھر میں 7 نایاب ہرنوں کی ہلاکت کا معاملہ بھی منظر عام پر آیا تھا۔ ہرن زہریلی گھاس کھانے سے ہلاک ہوئے۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

پی ایس ایل6: محدود تماشائیوں کو میچز دیکھنے کی اجازت

پی ایس ایل6: محدود تماشائیوں کو میچز دیکھنے کی اجازت

اپوزیشن کو تبدیلی کی سیاست منظور نہیں ،شاہ محمود

اپوزیشن کو تبدیلی کی سیاست منظور نہیں ،شاہ محمود