in

آرزوکیس میں ٹرائل کورٹ سے کیس کا ریکارڈ طلب

Sindh-High-Court-1

سندھ ہائی کورٹ نےآرزوکیس میں ٹرائل کورٹ سےکیس کا ریکارڈ طلب کرتےہوئےسماعت 15 فروری تک ملتوی کردی ہے۔

منگل کو سندھ ہائی کورٹ میں آرزو کے شوہرسیدعلی اظہرکی ضمانت منسوخی کے لئے درخواست پرسماعت ہوئی۔ آرزو کے والد کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ اس کیس میں چائلڈریپ کیس کےالزامات بھی شامل ہیں۔یہ ملزمان ٹرائل کورٹ میں بھی ضمانت کے بعد پیش نہیں ہورہے ہیں جب کہ کیس میں نامزد دیگرملزمان عدالت میں پیش ہورہے ہیں۔وکیل نےعدالت سے مطالبہ کیا کہ علی اظہرکی ضمانت منسوخ کرکےجیل بھیجنے کا حکم دیا جائے۔

گذشتہ سماعت میں سیدعلی اظہرکےوکیل نےعدالت کو بتایا کہ شریعت نےآرزوکواپنےشوہرکےساتھ رہنےکی اجازت دی ہے۔عدالت نےآرزوکےوالد سمیت دیگرفریقین سےبھی جواب طلب کرلیا۔والد کےوکیل نےجواب جمع کرانےکےلیےمہلت مانگ لی۔

کیس کا پس منظر

کراچی کی ریلوے کالونی کے رہائشی والدین کے مطابق ان کا تعلق مسیحی مذہب سے ہے۔عدالت میں ان کے پیش کردہ نیشنل ڈیٹا بیس اینڈ رجسٹریشن اتھارٹی (نادرا) کے جاری کردہ کم عمر بچوں کے سرٹیفیکیٹ کے مطابق ان کی بیٹی کی تاریخ پیدائش31جولائی2007ہے۔

مزید پڑھیے:آرزو راجا کیس: نکاح کے گواہوں کو اشتہاری قرار دیدیا

اس کیس میں درج کی گئی ایف آئی آر کےمطابق لڑکی کے والدین کا کہنا تھا کہ ان کی سب سے چھوٹی بیٹی کو ان کے 44 سالہ پڑوسی نے12 اکتوبر2020 کواغوا کیا۔اس کا زبردستی مذہب تبدیل کرایا جس کےبعد کم عمری کےباوجود اس کی شادی کرادی گئی۔اس طرح اُن کے مطابق یہ کیس اغوا کے ساتھ ساتھ ریپ کا بھی ہے۔یہ معاملہ میڈیا پرآنےاورعدالتی حکم پر پولیس نےلڑکی کو بازیاب کیا۔ جب کہ اغوا کے کیس میں نامزد ملزم اور لڑکی کے شوہر کو بھی گرفتارکرلیا گیا۔

ایف آئی آر میں شامل دفعات

بچی کےوالدین کی جانب سےدفعہ 5،8،9 سندھ چائلڈ میرج قانون سال 2016 اورچائلڈ میرج ایکٹ سال 2013 کے سیکشن 6 اور کوڈ آف کرمنل پروسیجرکےسیکشن 100 کےتحت درخواست دائرکی گئی ہے۔

کم عمری پر قانون



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

سعودی اقامہ، وزٹ ویزا کے حامل افراد کیلیے نئی سہولت متعارف

سعودی اقامہ، وزٹ ویزا کے حامل افراد کیلیے نئی سہولت متعارف

آفریدی نے مداحوں کو خوشخبری سنادی

آفریدی نے مداحوں کو خوشخبری سنادی