in

بلوچستان میں پیٹرول کی قلت برقرار، بیشتر پمپس بند

بلوچستان میں پیٹرول کی قلت برقرار، بیشتر پمپس بند

کوئٹہ سمیت بلوچستان کے مختلف اضلاع میں پیٹرول کی قلت برقرار ہے، نجی آئل کمپنیوں کی جانب سے پیٹرولیم مصنوعات کی سپلائی کم ہونے کے سبب صوبے کے 40 فیصد پمپمس بند ہوگئے۔

آل بلوچستان پیٹرولیم ڈیلرز ایسوسی ایشن کے صدر سید قیام الدین آغا کے مطابق بلوچستان میں پیٹرول کی مصنوعی قلت کی ذمہ دار نجی پیٹرولیم کمپنیاں ہیں، گزشتہ کئی ماہ سے نجی کمپنیوں کی جانب سے بلوچستان کے پیٹرول پمپس کو مطلوبہ مقدار میں پیٹرول اور ڈیزل فراہم نہیں کیا جارہا۔

انہوں نے بتایا کہ صوبے میں پچاس فیصد پٹرول پمپس کا انحصار نجی آئل کمپنیوں کی سپلائی پر ہے، جن کی جانب سے روزانہ ایک پیٹرول پمپ کو صرف 10 ہزار لیٹر پیٹرول فراہم کیا جارہا ہے جبکہ اوسطاً ہر ایک پٹرول پمپ پر روزانہ طلب 20 سے 25 ہزار لیٹر ہے۔

سید قیام الدین آغا کا کہنا ہے کہ ایرانی پیٹرول کی بندش کے باعث پیٹرول پمپس پر بوجھ بڑھ گیا ہے مگر سپلائی بدستور کم ہے، پیٹرول نہ ملنے کی وجہ سے شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے، جہاں پیٹرول دستیاب ہے وہاں پمپس پر گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کی لمبی قطاریں لگ گئی ہیں۔

انہوں نے خدشہ ظاہر کیا کہ اگر ایک ہفتے تک نجی آل کمپنیوں سے ڈیمانڈ کے مطابق بلوچستان کو پیٹرول نہیں ملا تو صوبے کے 80 فیصد پمپس بند ہوجائیں گے۔

بلوچستان پیٹرولیم ڈیلرز ایسوسی ایشن نے اوگرا، وفاقی حکومت اور حکومت بلوچستان سے اپیل کی ہے کہ وہ کوئٹہ سمیت بلوچستان کے دیگر اضلاع میں پیٹرول کی قلت کا فوری نوٹس لیں اور نجی آئل کمپنیوں کو ڈیمانڈ کے مطابق پیٹرول کی سپلائی یقینی بنانے کے احکامات جاری کریں۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

طالبان اقتدارمیں آئے تو ملکرکام کرنے کیلئے تیارہیں، برطانیہ

طالبان اقتدارمیں آئے تو ملکرکام کرنے کیلئے تیارہیں، برطانیہ

سنی لیونی کے نئے گھر کی تصاویر وائرل

سنی لیونی کے نئے گھر کی تصاویر وائرل