in

گڈاپ کے فارم ہاؤس کے پانی سے کلورین غائب

گڈاپ کے فارم ہاؤس کے پانی سے کلورین غائب

سندھ نیگلریا مانٹرینگ اینڈ انسپکشن کمیٹی نے انکشاف کیا ہے کہ گڈاپ پر بنے فارم ہاؤسز کے سوئمنگ پولز کے پانی میں کلورین شامل ہی نہیں۔

کراچی میں گڈاپ کے علاقے میں بنے فارم ہاؤس میں 12 جولائی کو نیگلریا سے پہلی ہلاکت رپورٹ ہوئی تھی۔ دماغ کھاجانے والے جان لیوا نیگلریا کا شکار اسی فارم ہاؤس کے سوئمنگ پول میں تیرنے والا 19 سالہ نوجوان ہوا تھا۔

سماء ڈیجیٹل سے گفتگو میں سندھ انسپکشن ٹیم کے ممبر شکیل احمد کا کہنا تھا کہ پانی کے فارم ہاؤسز میں قائم سوئمنگ پولز کے پانی کی چیکنگ کیلئے پہلے فیز کا آغاز گڈاپ پر بنے فارم ہاؤسز سے کیا گیا ہے۔ پانی کے معیار اور اس میں کلورین کی مقدار کو چیک کرنے کیلئے یہاں سے پانی کے نمونے حاصل کئے گئے تھے، جس کی تجزیاتی رپورٹ میں اس بات کا انکشاف ہوا کہ سوئمنگ پولز کے پانی میں یا تو کلورین انتہائی کم مقدار میں تھی یا شامل ہی نہیں کی گئی تھی۔

انسپیکشن ٹیم کے مطابق پولز میں صفائی کا انتظام بھی انتہائی ناقص تھا، جب کہ اکثر پولز میں گدلا پانی موجود تھا، کسی ایک فارم ہاؤس کے پاس بھی کلورین ٹیسٹنگ کی کٹ موجود نہیں تھی۔

انہوں نے اس بات کا بھی انکشاف کیا کہ فارم ہاؤس انتظامیہ اپنے اندازے سے پانی میں کلورین کی مقدار شامل کرتی تھی، جو کہ خود ایک انتہائی خطرناک بات ہے۔ اگر پانی میں کلورین کی مقدار زیادہ ہو جاتی ہے تو ایسی صورت میں پانی استعمال کرنے والے کی آنکھیں جلنا شروع ہوجاتی ہیں، جب کہ جلد جھلس جاتی ہے اور گلے میں خراش ہوتی ہے۔

اس موقع پر انہوں نے بتایا کہ فارم ہاؤس انتظامیہ اور ایسوسی ایشنز کو اس سلسلے میں وارننگ جاری کی گئی ہے کہ پانی میں کلورین کی مقرر کردہ تعداد ہی شامل کی جائے بصورت دیگر خلاف ورزی پر ان کے خلاف سخت ایکشن لیا جائے گا۔

سماء ڈیجیٹل سے بات کرتے ہوئے فارم ہاؤس ایسوسی ایشن کے جنرل سیکریٹری عبدالماجد نے بھی اس بات کی تصدیق کی کہ انتظامیہ کی جانب سے سوئمنگ پولز کے پانی میں مقرر کردہ کلورین کی مقدار کو شامل کرنے کی سختی سے ہدایت کی گئی ہے۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ فارم ہاؤس مالکان کو بھی اس بات کا پابند کیا گیا ہے کہ فارم ہاؤسز میں ٹیسٹنگ کٹس رکھی جائے۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

سب کے سافٹ ویئر اپ ڈیٹ ہوں گے، فیصل واوڈا

سب کے سافٹ ویئر اپ ڈیٹ ہوں گے، فیصل واوڈا

اہم خبر: کروناکیسز کی شرح 4.17فیصد ،24مزید اموات

اہم خبر: کروناکیسز کی شرح 4.17فیصد ،24مزید اموات