in

شہبازشریف نےفیض حمید کی بریفنگ کی تعریف کی تھی، راناثناء

شہبازشریف نےفیض حمید کی بریفنگ کی تعریف کی تھی، راناثناء

مسلم لیگ ن کے رہمنا رانا ثناء اللہ کا کہنا ہے کہ قومی سلامتی اجلاس میں شہبازشریف نے کسی پالیسی کی نہیں ڈی جی آئی ایس آئی جنرل فیض حمید کی بریفنگ اور غیر جانبدارنہ تجزیے کی تعریف کی تھی۔
سماء ٹی وی کے پروگرام ندیم ملک لائیو میں گفتگو کرتے ہوئے رانا ثناءاللہ کا کہنا تھا کہ شہبازشریف نے صرف یہ کہا تھا کہ میری جماعت کا موقف یہ ہے کہ ہمیں اب مزید کسی جنگ کا حصہ نہیں بننا چاہیے اس کے علاوہ انہوں نے کوئی بات نہیں کی۔
رہنما ن لیگ کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف کے رہنما شہبازشریف کے خلاف پروپیگنڈا کررے ہیں کیوں کہ انہیں خدشہ ہے شہبازشریف کہیں ان کے متبادل نہ بن جائیں۔
انہوں نے کہا کہ بریفنگ کے دوران شرکاء کو بتایا گیا کہ امریکا کے پاس خطے میں بیسز موجود ہیں اور اسے ہمارے بیسز کی ضرورت نہیں ہے۔
رانا ثناء اللہ کا کہنا تھا کہ جنرل فیض نے ہمیں تفصیل سے تمام واقعات پر بریفنگ دی اور کہا کہ سن 1989 میں جو ہم نے افغانستان سے متعلق فیصلے کیے تھے وہ غلط تھے۔
پارٹی پالیسی سے متعلق رانا ثناء اللہ کا کہنا تھا کہ مفاہمت ہو یا مزاحمت ہمارا مقصد ایک ہے اور وہ ملک میں سویلین بالادستی اور صاف شفاف الیکشن ہے۔
رانا ثناءاللہ کا کہنا تھا کہ سیاسی استحکام کے بغیر کوئی ملک ترقی نہیں کرسکتا اور اگر یہ مقصد مفاہمت سے حاصل ہوتا ہے تو پھر ہمیں لڑنے کی ضرورت نہیں ہے۔
انہوں نے کہا کہ مفاہمت کا مطلب یہ بلکل نہیں ہے کہ مقصد پر سمجھوتہ کیا جائے لیکن بات چیت میں کوئی مضائقہ نہیں یہ جو پچھلے دنوں اجلاس میں 8 گھنٹے بات چیت ہورہی تھی وہ انہی لوگوں کے ساتھ تھی اور ہوسکتا ہے کچھ اور لوگ بھی رابطے میں ہوں۔
مریم نواز کے کیسز سے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ اگر کسی بے گناہ شخص کو سزا دی جائے تو اسکی اس سے زیادہ کیا خواہش ہوسکتی ہے کہ اس کی سزا حتم ہوجائے۔
رانا ثناءاللہ کا کہنا تھا کہ نیب اور ایف آئی کو شہزاد اکبر کنٹرول کرتے ہیں اور یہ نہیں ہوسکتا کہ شہزاد اکبر نے وزیراعظم کو بتائے بغیر ندیم ملک کو نوٹس جاری کیا ہو۔
پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے رہنما تحریک انصاف سینیٹر فیصل واوڈا کا کہنا تھا کہ شہبازشریف مفاہمت کے نام پر منافقت کررہے ہیں اور انہوں تحریک انصاف کو بھی مفاہمت کا پیغام پہنچایا ہے۔
فیصل واوڈا کا کہنا تھا کہ مریم نواز آج شہبازشریف کو سنارہی تھیں کہ ہم اسٹیبلشمنٹ کے خلاف جدوجہد کررہے ہیں اور وہ تعریفیں کررہے تھے۔
انہوں نے کہا کہ اگر آج مریم نواز کی سزا معاف ہوجائے تو ان کی گالیاں بند ہوجائیں گی۔
فیصل واوڈا کا کہنا تھا کہ قومی سلامتی اجلاس میں شہبازشریف نے کہا کہ کہ ہم فوج کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں اور امریکا کو بیسز نہ دینے کے فیصلے پر فوج کو مبارکباد پیش کرتے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ شہبازشریف کے بیان کے بعد ان کی تصحیح کردی گئی کہ یہ ہماری نہیں عمران خان کی پالیسی ہے جس پر ہم عمل کریں گے۔
رہنما تحریک انصاف کا کہنا تھا کہ شہبازشریف نے جو پیرپڑنے والی بات کی تھی اس پر عملدرآمد شروع ہوچکا ہے اور ن لیگ کے رہنماؤں کو یہ سمجھ نہیں آرہا کہ چلنا کس کے پیچھے ہے۔
فیصل واوڈا کا کہنا تھا کہ شاہد خاقان کہہ رہے کہ میں نے الیکشن میں دھاندلی کی ہے اور ہمیں الیکشن چرانے کا تجربہ ہے۔
رہنما تحریک انصاف نے سینئر صحافی ندیم ملک کو ایف آئی اے کے جانب سے جاری ہونے والے نوٹس پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ندیم ملک ایک ایماندار صحافی ہیں اور وزیراعظم بھی ان کی غیرجانبداری کو قدر کے نگاہ سے دیکھتے ہیں۔
فیصل واوڈا کا کہنا تھا کہ صحافی کبھی اپنی خبر کی سورس نہیں بتاتے لیکن ندیم ملک سے مدد مانگی گئی ہے اور دینا یا نہ دینا ان کی مرضی ہے تاہم میں اس معاملے کو وزیراعظم کے سامنے ضرور اٹھاؤں گا۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

ویڈیو: پنجاب بھر میں مویشی منڈیوں کا آغاز ہوگیا

ویڈیو: پنجاب بھر میں مویشی منڈیوں کا آغاز ہوگیا

پی ٹی وی جنسی ہراسگی کیس،سپریم کورٹ نے فیصلہ سنادیا

پی ٹی وی جنسی ہراسگی کیس،سپریم کورٹ نے فیصلہ سنادیا