in

بیوروکریسی نیب کے ڈر سے کام نہیں کرپاتی،فرخ حبیب

بیوروکریسی نیب کے ڈر سے کام نہیں کرپاتی،فرخ حبیب

وزیرمملکت برائے اطلاعات فرخ حبیب کا کہنا ہے کہ نیب کی قوانین میں بہتری کی ضرورت ہے اور بسا اوقات بیورکریسی نیب کی ڈر سے وہ کام بھی نہیں کر پاتی جو ان کے کرنے کے ہوتے ہیں۔
سماء کے پروگرام سوال میں گفتگو کرتے ہوئے فرخ حبیب کا کہنا تھا کہ ہم بیوروکریسی کو نیب سے کوئی استشنیٰ نہیں دینا چاہتے مگر قوانین میں وضاحت کی ضرورت ہے۔
فرخ حبیب کا کہنا تھا کہ دو نجی اداروں کے معاہدوں میں بھی نیب کا عمل دخل ہوتا ہے لیکن اگر اس میں سرکاری فنڈ کا کوئی معاملہ نہیں ہے تو وہاں نیب کا کوئی اختیار نہیں ہونا چاہیے۔
رہنما تحریک انصاف کا کہنا تھا کہ ہم نے یہ معاملہ اپوزیشن کے سامنے بھی رکھا تھا مگر انہوں نے نیب کے قوانین میں اپنے فائدے کی ترمیم لاکر این آر او لینے کی کوشش کی۔
انہوں نے کہا کہ نیب کیسز کے تعداد کا بھی ایک مسئلہ ہے آصف زرداری کے جعلی اکاونٹ کیس میں اب تک 33 ارب کی ریکوری ہوچکی ہے جس سے اندازہ ہوتا ہے کہ یہ کس حجم کا کیس ہے۔
شاہد خاقان کے الزامات پر تبصرہ کرتے ہوئے فرخ حبیب کا کہنا تھا کہ وہ تو خود ایل این جی کے معاملے پر نیب میں کیس بھگت رہے ہیں اور اگر ان کے پاس کوئی ثبوت ہے تو انہیں عدالت میں جانا چاہیے۔
فرخ حبیب کا کہنا تھا کہ ہم نے بجلی اور ایل این جی کے مہنگے معاہدے دوبارہ مرتب کیے ہیں جس سے قوم کو اربوں روپے کی بچت ہوگی۔
انہوں نے کہا کہ عوام کو بجلی چاہیے مگر سستی جس کے لیے ہم نے ڈیمز پر کام شروع کردیا ہے۔
پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے رہنما ن لیگ زبیرعمر کا کہنا تھا کہ عام فہم بات یہ ہے کہ ان کا الزام تھا کہ ہم نے ضرورت سے زیادہ بجلی بنائی ہے تو سوال یہ ہے کہ اب لوڈشیڈنگ کیوں کی جارہی ہے۔
زبیرعمر کا کہنا تھا کہ گرمیوں میں کبھی لوڈشیڈنگ نہیں ہوتی مگر اس بار گیس کی لوڈشیڈنگ بھی ہورہی ہے۔
رہنما ن لیگ کا کہنا تھا کہ حکومت وقت کو موجودہ صورتحال پر جواب دینا ہوتا ہے مگر ان کے ہر سوال کا جواب یہی ہوتا ہے کہ یہ سب ماضی کی حکومتوں نے کیا ہے۔
پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے تجزیہ کار محسن بیگ کا کہنا تھا کہ جتنے بھی ڈیمز پر اس وقت کام ہورہا ہے وہ ماضی کی حکومتوں میں شروع کیے گئے تھے انہیں سارا کریڈٹ نہیں لینا چاہئے۔
محسن بیگ کا کہنا تھا کہ لوڈ شیڈنگ ماضی کی حکومتوں کے دور میں بھی ہوتی تھی مگر ن لیگ حکومت نے بجلی کے مہنگے معاہدے کرکے کم سے کم عوام کو بجلی تو فراہم کردی۔
انہوں نے کہا کہ آج نیب کی وجہ سے حکومت کے ساتھ کوئی کمپنی معاہدہ کرنے کو تیار نہیں کیوں کہ معاہدے کے بعد نیب والے پکڑ لیتے ییں۔
محسن بیگ کا کہنا تھا کہ نیب صرف نیگیٹیوٹی پھیلارہا ہے اسے بند کردینا چاہیے کیوں کہ نیب صرف قوم کا وقت ضائع کر رہا ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ اگر نیب کو ختم نہیں کرنا تو قوانین بہتر کریں کیوں کہ اگر بیوروکریسی کام نہیں کرے گی تو ملک نہیں چل سکتا۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

عامر خان کی طلاق فاطمہ ثنا شیخ بھی میدان میں آگئیں اپنے تعلق کے بارے میں واضح بات بتادی 

عامر خان کی طلاق فاطمہ ثنا شیخ بھی میدان میں آگئیں اپنے تعلق کے بارے میں واضح بات بتادی 

علی ظفر کی علیزے شاہ کے ساتھ ویڈیو وائرل

علی ظفر کی علیزے شاہ کے ساتھ ویڈیو وائرل