in

لاہور دھماکے کا مقدمہ درج کرلیا گیا

لاہور دھماکے کا مقدمہ درج کرلیا گیا

لاہور کے علاقے جوہر ٹاؤن میں ہونے والے دھماکے کا مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔ مقدمے میں 3 دہشت گردوں کو نامزد کیا گیا ہے۔

مقدمہ محکمہ انسداد دہشت گردی لاہور تھانے میں انسپکٹرعابد بیگ کی مدعیت میں درج کیا گیا۔ مقدمے میں قتل، اقدام قتل اور دہشت گردی کی دفعات شامل کی گئی ہیں۔ مقدمے میں 7 اے ٹی اے، 3/4ایکسپلوزو ایکٹ سميت دیگر دفعات شامل ہیں۔

درج ایف آئی آر کے مطابق دہشت گردوں نے کارروائی میں گاڑی اور موٹر سائیکل استعمال کیں۔ مقدمے کے متن میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ دھماکے میں 3افراد جاں بحق اور 21 زخمی ہوئے۔ مقدمے میں 3 نامعلوم دہشت گردوں کا ذکرکیا گیا ہے۔

قبل ازیں محکمہ انسداد دہشت گردی پنجاب کے حکام کا کہنا تھا کہ دھماکا کرنے والی ڈیوائس کو گاڑی میں نصب کیا گیا تھا۔ دھماکے کيلئے وہیکل بیسڈ ایکسپوزیو ڈیوائس استعمال ہوئی۔ دھماکےمیں کئی میٹر دور جا کر گرنے والا پرزہ حملے میں استعمال ہونے والی گاڑی کا ہے۔ دھماکا ہوتے ہی گاڑی کی سسپنشن وقوعہ سے کئی میٹر دور جاگری تھی۔

واضح رہے کہ لاہور کے علاقے جوہر ٹاؤن میں 23 جون کو دن ساڑھے 11 بجے ہونے والے دھماکے میں 3 افراد جاں بحق، جب کہ 23 سے زائد افراد زخمی ہوئے۔ اسی علاقے میں جماعت الدعوۃ کے امیر حافظ سعید کی رہائش گاہ بھی قائم ہے اور حملے کی جگہ سے صرف چند قدم کے فاصلے پر ہے۔

آئی جی پنجاب کے مطابق چیک پوسٹ ہونے کے باعث حملہ آور اپنے ٹارگٹ تک نہ پہنچ سکا۔ دھماکے کی شدت کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ قریب واقع گھروں اور دکانوں کے شیشے ٹوٹ گئے، جب کہ ايک رکشہ مکمل تباہ اور قريب موجود موٹر سائيکلوں کو بھی نقصان پہنچا۔

دوسری جانب جوہر ٹاؤن دھماکے کی ابتدائی رپورٹ بھی تیار کرلی گئی ہے۔ سیکیورٹی حکام کے مطابق دھماکے میں 10 سے 15 کلو گرام دھماکا خیز مواد استعمال ہوا۔ دھماکا خیز مواد غیر ملکی ساختہ کا تھا۔

رپورٹ کے مطابق دھماکا خیز مواد گاڑی میں نصب کیا گیا تھا۔ دھماکے کی جگہ 3 فٹ گہرا اور 8 فٹ چوڑا گڑھا پڑا۔ جب کہ استعمال ہونے والی ڈیوائس پلانٹ کرنے سے پہلے علاقے کی ریکی بھی کی گئی تھی۔

حملہ آوروں اور سہولت کاروں کے گرد گھیرا تنگ کرنے کیلئے علاقے کی جيو فينسنگ شروع کر دی گئی ہے۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

دنیا کے سب سے بڑے طیارے کی کراچی میں لینڈنگ

دنیا کے سب سے بڑے طیارے کی کراچی میں لینڈنگ

کراچی: جان پلازہ میں انجینئرنگ ورک تاحال شروع نہیں ہوسکا

کراچی: جان پلازہ میں انجینئرنگ ورک تاحال شروع نہیں ہوسکا