in

آن لائن امتحانات کیلئے نمل کے طلباء کی درخواست مسترد

NUML protest

اسلام آباد ہائی کورٹ نے آن لائن امتحانات کے لیے نمل یونیورسٹی کے طلباء کی درخواست مسترد کر دی۔

بدھ 27 جنوری کو آن لائن امتحانات کے لیے طلباء کی درخواست پر سماعت ہوئی، جس پر ہائی کورٹ نے معاملہ ہائر ایجوکیشن کمیشن (ایچ ای سی) کو بھیج دیا۔

طالب علم علی بن شفاعت اور شہریار عباسی نے 18 جنوری کو عدالت میں درخواست دائر کی تھی جس میں انہوں نے یونیورسٹی کی جانب سے کیمپس بلا کر امتحانات لینے کے معاملے کو چیلنج کیا تھا۔

عدالت نے ریمارکس دیے کہ يہ پالیسی معاملہ ہے اس لیے مداخلت نہیں کریں گے۔ ہائر ایجوکیشن کمیشن پالیسی کے مطابق فیصلہ کرے۔

کلاسزآئن لائن ہوئیں،امتحانات بھی آئن لائن لیں،نمل کےطلباکااحتجاج

درخواست میں طلباء کا مؤقف تھا کہ یونیورسٹی کی انتظامیہ نے پہلے آن لائن امتحانات کی تاریخیں جاری کی تھیں لیکن پھر اچانک کیمپس میں امتحانات لینے کا شیڈول جاری کر دیا۔

درخواست گزاروں کے مطابق طلباء کے لیے کیمپس کے امتحانات کا حصول ممکن نہیں ہے کیونکہ لیکچر بھی ان تک صحیح سے نہیں پہنچائے گئے تھے۔ انکا کہنا تھا کہ انتظامیہ نے درخواست گزاروں کا مؤقف سننے سے انکار کیا، جبکہ طلبا کے حقوق اور مطالبات پر غور نہیں کیا گیا۔

واضح رہے کہ اسلام آباد کی نمل یونیورسٹی کے طلباء نے 18 جنوری کو احتجاج کرتے ہوئے مطالبہ کیا تھا کہ آدھی ٹیوشن فیس، بسوں اور ہاسٹل کی پوری فیس واپس کی جائے جب کہ کلاسز کی طرح امتحانات بھی آئن لائن ہی لیے جائیں۔

گزشتہ روز لاہور کے علاقے جوہر ٹاؤن کے خیابان جناح روڈ پر واقع یونیورسٹی آف سینٹرل پنجاب کے باہر آن لائن امتحانات کے مطالبے کیلئے 300 سے 350 طلباء نے احتجاج کیا۔

لاہور: طلباء کی ہنگامہ آرائی، 500نامعلوم افراد کیخلاف مقدمہ درج



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Police

لاہور: ڈکیتی مزاحمت پر خاتون جاں بحق

کون سانشہ کیاہے؟بھارتی شلپاشیٹھی اور تاپسی پنوں پربرس پڑے

کون سانشہ کیاہے؟بھارتی شلپاشیٹھی اور تاپسی پنوں پربرس پڑے