in

علاج سے قبل پیسوں کا مطالبہ، لڑکی چل بسی

علاج سے قبل پیسوں کا مطالبہ، لڑکی چل بسی

بھائی سماء ٹی وی پر رو پڑا

کراچی کے سچل گوٹھ میں واقع میمن اسپتال میں ڈاکٹروں نے 5 لاکھ روپے ایڈوانس کے بغیر حادثے میں زخمی ہونے والی لڑکی کا علاج کرنے سے انکار کردیا جس کے باعث وہ جاں بحق ہوگئی۔

سندھ حکومت نے گزشتہ برس ’امل عمر بل‘ کے نام سے قانون بناکر اسپتالوں کو پابند کیا تھا کہ ایمرجنسی میں آنے والے زخمیوں اور مریضوں سے ایڈوانس رقم کا مطالبہ نہیں کیا جائے گا۔ زخمی کا فوری علاج کیا جائے اور اس پر آنے والے اخراجات سندھ حکومت ادا کرے گی۔

قانون بننے کے باوجود کراچی کے پرائیویٹ اسپتالوں کی روش نہیں بدلی۔ گزشتہ روز جاں بحق ہونے والی لڑکی نازیہ کے بھائی نے سماء ٹی وی کے اینکر علی حیدر کو بتایا کہ نازیہ موٹر سائیکل میں دوپٹہ آنے کی وجہ سے زخمی ہوگئی تھی جس پر انہیں قریب ہی میمن اسپتال منتقل کیا گیا جہاں عملے نے ہاتھ لگانے سے بھی انکار کردیا اور کہا کہ پہلے 5 لاکھ روپے جمع کروائیں۔

نازیہ کے بھائی کے مطابق ’میں نے اسپتال انتظامیہ سے کہا کہ میں ایمرجنسی میں آیا ہوں اور اس وقت میرے پاس پیسے نہیں ہیں لیکن اسپتال انتظامیہ نے 5 لاکھ سے کم کرکے کہا کہ آپ 3 لاکھ روپے جمع کرائیں۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

کراچی میں 2 قبرستانوں کیلئے زمین مختص کردی گئی

کراچی میں 2 قبرستانوں کیلئے زمین مختص کردی گئی

پنجاب:سرکاری افسران کیلئے ڈریس کوڈ جاری کردیاگیا

پنجاب:سرکاری افسران کیلئے ڈریس کوڈ جاری کردیاگیا