in

سندھ ہائیکورٹ: غیرقانونی سی این جی ورکشاپس کیخلاف کارروائی کاحکم

سندھ ہائیکورٹ: غیرقانونی سی این جی ورکشاپس کیخلاف کارروائی کاحکم

سندھ ہائیکورٹ نے صوبے میں غیرقانونی سی این جی ورکشاپس کیخلاف کارروائی کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے 23 فروری کو پیشرفت پر رپورٹ طلب کرلی۔

سندھ ہائی کورٹ میں اسکول وین اور پبلک ٹرانسپورٹ میں غیرمعیاری سی این جی کٹس سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی جس پر عدالت نے ریمارکس دیے کہ کسی گاڑی میں غیر معیاری اور غیر تصدیق شدہ کٹس نہیں لگائی جائیں۔

عدالت نے ریمارکس دیے کہ سی این جی کٹس کیلئے لائسنس یافتہ ورکشاپس قائم کی جائیں،ایچ ڈی آئی کے نمائندہ نے بتایا کہ ہمارے پاس جو سلنڈرز آتے ہیں ان کو چیک کرلیتے ہیں۔ جس پر عدالت نے کہا پھر اس ادارے کا مقصد ہی ختم ہوگیا کیا فائدہ ایسے ادارے کا؟۔

عدالت نے سوال کیا کہ تصدیق شدہ سلنڈرز کیسے لگیں گے؟ کوئی آئيگا نہیں تو چیک نہیں کریں گے آپ ڈی آئی جی ٹریفک کیا کررہے ہیں؟، کیا ٹریفک پولیس کا صرف یہی کام ہے ٹریفک دیکھے، ورکشاپس اور سلینڈرز کون چیک کرے گا؟۔

ڈی آئی جی ٹریفک کے نمائندے نے عدالت کو بتایا کہ ہمارا کام صرف ٹریفک کنٹرول کرنا ہے۔ عدالت نے ریمارکس دیے کہ پھر آئی جی سندھ کو بلاتے ہیں وہی آکر بتائیں گے کس کا کیا رول ہے اگر ہر فرد یہی کہے گا میرا رول نہیں تو کام کون کرے گا؟۔

عدالت نے ریمارکس دیے کہ ابھی تک صرف 4سی این جی اسٹیشنز نے لائسنس کیلئے اپلائی کیا ہے۔

عدالت نے غیرقانونی سی این جی ورکشاپس کیخلاف کارروائی کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے 23 فروری کو رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

بھرم ایسےختم کیاجاتاہے،آمنہ الیاس کی دلچسپ ویڈیو

بھرم ایسےختم کیاجاتاہے،آمنہ الیاس کی دلچسپ ویڈیو

تحریک انصاف حکومت نے 12 ارب ڈالر کا قرضہ لینے کا فیصلہ کرلیا

تحریک انصاف حکومت نے 12 ارب ڈالر کا قرضہ لینے کا فیصلہ کرلیا