in

جمعیت علمائے اسلام کی رجسٹریشن کیخلاف درخواست دائر

جمعیت علمائے اسلام کی رجسٹریشن کیخلاف درخواست دائر

جمعیت علماء اسلام کی فضل الرحمان کے نام سے الیکشن کمیشن میں رجسٹریشن کے خلاف پٹیشن دائر کر دی گئی۔

کوئٹہ میں نیوز کانفرنس کرتے ہوئے باغی رہنما رہنماء مولانا محمد خان شیرانی نے کہا کہ 2002 سے 2018 تک جے یوآئی مولانا فضل الرحمان کے نام سے الیکشن کمیشن میں رجسٹرڈ رہی۔ اس حوالے سے جماعت میں آواز بھی اٹھتی رہی اور اب الیکشن کمیشن میں باقاعدہ پٹیشن دائر کر دی ہے۔

انہوں نے کہا کہ کوئی بھی جماعت کو کسی کے نام سے رجسٹر کرنے کے لئے جنرل کونسل میں قرارداد پاس کرنا ضروری ہے یہ ایک قانونی اور آئینی مسئلہ ہے۔

حافظ حسین احمد نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان نے جمعیت میں مورثیت کو فروغ دیا۔ وہ الیکشن کمیشن کے باہر دھرنے سے قبل اپنی جماعت میں جمہوریت لائیں۔

انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان نے قومی اسمبلی میں سنیئر اراکین کی موجودگی کے باوجود اپنے بیٹے کو پارلیمانی لیڈر بنایا۔ صوبائی سطح پر بھی موروثیت ہے۔

مولانا شیرانی کا مزید کہنا تھا کہ جمیعت علماء اسلام کی از سر نو تنظیم نو کرنے جا رہے ہیں۔

پاکستان ڈٰیموکریٹک موومنٹ کی حکومت مخالف تحریک میں شدت کے ساتھ ہی جمعیت علمائے اسلام کے متعدد مرکزی رہنماؤں نے پارٹی سے بغاوت کرتے ہوئے اپنا الگ دھڑا تشکیل دینے کا اعلان کیا ہے۔ ان میں سرفہرست مولانا محمد خان شیرانی اور حافظ حسین احمد ہیں۔

جمعیت علمائے اسلام کا موقف ہے کہ پی ڈی ایم کا زور توڑنے کیلئے اسٹیبلشمنٹ نے پارٹی میں نقب لگائی ہے اور مولانا عبدالغفور حیدری نے اس کے خلاف پاکستان آرمی کے ہیڈکوارٹرز ( جی ایچ کیو) کے سامنے احتجاج کی دھمکی بھی دی تھی۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

ملیرایکسپریس وے کیلئے گلشن معمار میں درجنوں مکانات مسمار

ملیرایکسپریس وے کیلئے گلشن معمار میں درجنوں مکانات مسمار

مناسب وقت پر استعفیٰ دینگے، لانگ مارچ بھی ہوگا، مریم

مناسب وقت پر استعفیٰ دینگے، لانگ مارچ بھی ہوگا، مریم