in

پولیس پرحملےاورغیرقانونی اسلحے کا کیس،عزیر بلوچ کو گواہان نے شناخت کرلیا

پولیس پرحملےاورغیرقانونی اسلحے کا کیس،عزیر بلوچ کو گواہان نے شناخت کرلیا

انسداد دہشت گردی عدالت میں لیاری گینگ وار کے سرغنہ عزیر بلوچ کو گواہان نے شناخت کرلیا ہے۔

کراچی کی انسداد دہشت گردی عدالت میں جمعرات کو پولیس پر لیاری میں حملے اورغیر قانونی اسلحے سے متعلق کیسز کی سماعت ہوئی۔ملزم عزیر بلوچ اور 9 پولیس اہلکار گواہوں کوعدالت میں پیش کیا گیا۔

گواہان نے کٹہرے میں کھڑے عزیر بلوچ کو گواہی میں شناخت کرلیا۔ گواہان نےعدالت کو بتایا کہ ملزم کی ایما پر لیاری آپریشن کے دوران پولیس افسران اور اہلکاروں پر حملے کئے گئے۔عدالت نے 9 گواہوں کا بیان ریکارڈ کرلیا۔

مزیدپڑھیں:عزیربلوچ اب پیپلزپارٹی کا رکن نہیں،ماضی میں رہا ہوگا،فیصل کریم

عزیر بلوچ کو ناکافی ثبوت پر اب تک 14 مقدمات میں بری کیا جا چکا ہے۔ بیشتر مقدمات میں 2012 سے 2013 تک ہونے والے جرائم شامل ہیں۔

دو ماہ قبل عزیربلوچ کے مسلسل بری ہونے سے متعلق عدالت میں پراسیکیوٹر نے انکشافات کيا تھا کہ عزیر بلوچ کے کیسز سے متعلق گواہان و پراسیکیوشن کو جان سے مارنے کی دھمکیاں دی جارہی ہیں۔ سرکاری وکيل نے کہا کہ گواہان پراسیکیوشن اور عدالتی عملے کو تحفظ فراہم کیا جائے۔

مزید پڑھیں:عزیر بلوچ مزید 3 مقدمات سے بری

عزیر بلوچ کو رینجرز نے 30 جنوری 2016ء کو حراست میں لیا تھا۔ رینجرز نے اپریل 2017ء میں عزیر بلوچ کو جاسوسی اور غیر ملکی انٹیلی جنس ایجنسیوں کو معلومات فراہم کرنے کے الزامات پر پاک فوج کے حوالے کر دیا تھا، کور 5 نے عزیر بلوچ کو تین سال بعد 6 اپریل 2020ء کو پولیس کے سپرد کر دیا تھا۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

راکھی نے میکا سنگھ کے پاؤں چھولیے

راکھی نے میکا سنگھ کے پاؤں چھولیے

تین روز میں ڈالر 1 روپیہ 42 پیسے مہنگا ہوگیا

تین روز میں ڈالر 1 روپیہ 42 پیسے مہنگا ہوگیا