in

شہبازشریف کی روانگی کی درخواست، ہائیکورٹ کاوفاقی حکومت سےجواب طلب

شہبازشریف کی روانگی کی درخواست، ہائیکورٹ کاوفاقی حکومت سےجواب طلب

شہبازشریف کی علاج کے لیے بیرون ملک جانے کے عدالتی حکم پرعملدرآمد کی درخواست پر لاہور ہائیکورٹ نے وفاقی حکومت سے 1 ہفتے میں جواب طلب کر لیا۔

بدھ کو اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کی لاہور ہائیکورٹ میں درخواست کی سماعت ہوئی۔ جسٹس علی باقر نجفی نے استفسار کیا کہ میڈیا رپورٹس کے مطابق شہباز شریف کا نام ای سی ایل میں آچکا ہے۔کیا ایسی صورت میں لاہور ہائیکورٹ کا حکم قابل عمل ہے۔عدالت نے سرکاری وکیل کو آئندہ سماعت پر معاونت کرنے کی بھی ہدایت کردی۔

کیس کی سماعت کے دوران جسٹس علی باقر نجفی نے استفسار کیا کہ ہائیکورٹ کا عبوری حکم سپریم کورٹ میں چیلنج ہونے کے بعد کیا یہ درخواست قابل سماعت ہے۔ اس پر لیگی رہنما کے وکیل نے کہا کہ عدالت حکومت سے جواب منگوا لے تو ساری بات  واضح ہوجائے گی۔

ڈپٹی اٹارنی جنرل نے بتایا کہ عدالتی حکم پرعمل درآمد ہوچکا ہے۔شہباز شریف نام بلیک لسٹ میں نہیں بلکہ ایک اور لسٹ میں ہے۔اپوزیشن لیڈر نے اپنے عدالتی حکم کو کسی متعلقہ حکام کو جمع نہیں کروایا اور سیدھا ایئر پورٹ چلے گئے۔شہباز شریف کی ذمہ داری تھی کہ عدالتی حکم کی سروس کرواتے۔ عدالت نے سرکاری وکیل کو ہدایت کی کہ وہ 26 مئی کو اس کا تحریری جواب جمع کرائیں۔

واضح رہے کہ پچھلے ہفتے پاکستان مسلم لیگ نون کے صدر شہبازشریف لاہور سے لندن نہ جاسکے۔ امیگریشن حکام نے علامہ اقبال انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر انھیں روک ليا تھا اور آف لوڈ کرکے واپس بھيج ديا۔ 7 مئی کو لاہور ہائی کورٹ نے شہباز شریف کو علاج کے لیے ملک سے باہر جانے کی مشروط اجازت دی تھی ۔اپوزيشن رہنما نے عدالت کو بتایا تھا کہ وہ کينسر کے مريض ہيں اورجب بھی بيرونِ ملک گئے،مقررہ وقت پر واپس آگئے۔عدالت نے شہباز شریف کا نام بلیک لسٹ سے نکالنے کی درخواست پر وفاقی حکومت سے جواب بھی طلب کیا تھا۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

علی ظفرکی’برتھ ڈے پارٹی’ پرتنقید

علی ظفرکی’برتھ ڈے پارٹی’ پرتنقید

یشمہ گل کی شادی کیلئے نانی کی تگڑی آفر

یشمہ گل کی شادی کیلئے نانی کی تگڑی آفر