in

بیگم نسیم ولی خان انتقال کرگئیں

بیگم نسیم ولی خان انتقال کرگئیں

عوامی نیشنل پارٹی (اے این پی) کی سابق صوبائی صدر بیگم نسیم ولی خان انتقال کرگئیں۔

اہل خانہ کے مطابق بیگم نسیم ولی شوگر اور عارضہ قلب میں مبتلا تھیں اور کافی عرصے سے علیل تھی۔ ان کا انتقال چارسدہ میں علی الصبح اتوار 16 مئی کو ہوا۔

بیگم نسیم ولی خان اے این پی کے قائد تحریک خان عبدالولی خان کی  اہلیہ تھیں۔ وہ 3 بار رکن صوبائی اسمبلی منتخب ہوئیں۔ بیگم نسیم ولی خان کے نواسے لونگین ولی حان کے مطابق بیگم نسیم ولی خان کی پیدائش1936 میں ہوئی تھی۔

اے این پی کی جانب سے جاری اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ بیگم نسیم ولی کی نماز جنازہ آج بروز اتوار 16، مئی کی شام 6 بجے ولی باغ چارسدہ میں ادا کی جائے گی۔

خان عبدالغفار خان کی بہو اور ولی خان کی اہلیہ بیگم نسیم ولی خان کا شمار نہ صرف صوبہ خیبر پختونخوا بلکہ پاکستان کی منجھی ہوئی خواتین سیاسی رہنمائوں میں ہوتا ہے۔

وہ عوامی نیشنل پارٹی کی بڑی لیڈر ، صوبائی صدر اور پارلیمانی لیڈر بھی رہی۔ ولی خان کی زندگی میں بیگم نسیم ولی خان کو پارٹی میں اہم مقام حاصل رہا اور ان کو فیصلہ سازی میں بھی خاص اہمیت دی جاتی تھی۔

بیگم نسیم ولی خان کی شادی سال 1954 میں ولی خان سے  ہوئی۔ ان کو 1977میں خیبر پختونخوا کی پہلی  خاتون رکن اسمبلی منتخب ہونے کا بھی منفرد اعزاز حاصل ہوا۔ انہوں نے 1977 کے عام انتخابات میں 8 جماعتوں پر مشتمل پاکستان قومی اتحاد کے ٹکٹ پر ایوانِ زیریں کے 2 حلقوں سے کامیابی حاصل کی تھی۔ تاہم اتحاد کی جانب سے انتخابی عمل کے بائیکاٹ کے سبب وہ اپنی رکنیت کا حلف اٹھانے سے محروم رہی تھیں۔

بیگم نسیم ولی خان اے این پی کے موجودہ سربراہ اسفندیار ولی کی دوسری والدہ ہیں، جب کہ سنگین ولی خان اسفندیار ولی کی حقیقی والدہ ہیں جو وفات پا چکی ہیں۔

بیگم نسیم ولی خان کے انتقال پر افغان صدر اشرف غنی سمیت دیگر ملکی سیاسی شخصیات نے بھی تعزیت اور دکھ کا اظہار کیا۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

ملک بھر میں آج سے پبلک ٹرانسپورٹ بحال

ملک بھر میں آج سے پبلک ٹرانسپورٹ بحال

بیگم نسیم ولی کوآئرن لیڈی کیوں کہاجاتا تھا

بیگم نسیم ولی کوآئرن لیڈی کیوں کہاجاتا تھا