in

حویلیاں طیارہ حادثہ، دونوں پائلٹس کے لائسنس مشکوک تھے، رپورٹ

حویلیاں طیارہ حادثہ، دونوں پائلٹس کے لائسنس مشکوک تھے، رپورٹ

پاکستان انٹرنیشنل ایئرلائنز کی رپورٹ میں انکشاف ہوا ہے کہ حويلياں میں حادثے کا شکار ہونیوالے طیارے کے دونوں پائلٹس کے لائسنس مشکوک تھے۔ 2016ء میں پیش آنیوالے واقعے میں معروف نعت خواں جنید جمشید سمیت 47 افراد جاں بحق ہوئے تھے۔

چترال سے 7 دسمبر 2016ء اسلام آباد جانیوالا پاکستان انٹرنیشنل ایئرلائنز کا طیارہ حویلیاں کے قریب حادثے کا شکار ہوا تھا، واقعے میں معروف نعت خواں اور مبلغ جنید جمشید، ان کی اہلیہ سمیت 47 افراد شہید ہوگئے تھے۔

پاکستان انٹرنیشنل ایئرلائنز (پی آئی اے) نے سپریم کورٹ میں ایک رپورٹ جمع کرائی ہے جس میں انکشاف ہوا ہے کہ حادثے کے شکار طیارے کے دونوں پائلٹس کے لائسنس مشکوک تھے۔

کرونا ازخود نوٹس کی سماعت کے دوران عدالت نے جعلی پائلٹس کا معاملہ اٹھاتے ہوئے پی آئی اے اور سول ایوی ایشن حکام سے رپورٹ طلب کی تھی۔

قومی ایئرلائنز کی رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ جن 141 پائلٹس کے لائسنس مشکوک قرار دیئے گئے تھے، ان میں حویلیاں میں حادثے کا شکار ہونے والے جہاز کے 2 پائلٹس بھی شامل تھے۔

رپورٹ کے مطابق صالح یار جنجوعہ اور احمد منصور جنجوعہ کے لائسنس جانچ پڑتال میں مشکوک قرار دیئے گئے تھے لیکن دونوں اس سے قبل ہی وہ حادثے لقمۂ اجل بن گئے۔

پی آئی اے کی رپورٹ سے متعلق جنيد جمشيد کے بھائی ہمايوں جمشيد کا کہنا ہے کہ جو رپورٹ انہیں دکھائی گئی تھی اس ميں لائسنس مشکوک ہونے کا ذکر نہيں تھا، اگر لائسنس واقعی مشکوک تھے تو يہ ایسی مجرمانہ غفلت ہے جس کی مثال کہيں نہيں مل سکتی۔

سماء سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے مزید کہا کہ واقعے کے ذمہ داروں کو نشان عبرت بنايا جائے تاکہ آئندہ ايسا نہ ہو، اس کیس کو تمام اداروں کیلئے مثال بنانا ہوگا۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

پاکستان کے مختلف شہروں میں نماز عیدالفطر کے اوقات

پاکستان کے مختلف شہروں میں نماز عیدالفطر کے اوقات

واردات کے دوران خاتون سے زیادتی کرنے والے باپ بیٹا گرفتار انتہائی شرمناک تفصیلات

واردات کے دوران خاتون سے زیادتی کرنے والے باپ بیٹا گرفتار انتہائی شرمناک تفصیلات