in

جاوید لطیف کے جسمانی ریمانڈ میں 2دن کی توسیع

جاوید لطیف کے جسمانی ریمانڈ میں 2دن کی توسیع

لاہور کی مقامی عدالت نے مسلم لیگ ن کے ایم این اے جاوید لطیف کے جسمانی ریمانڈ میں مزید دو دن کی توسیع کر دی۔

عدالت نے جاوید لطیف کے جسمانی ریمانڈ کی درخواست پر محفوظ فیصلہ سنایا۔

پیر 10 مئی کو ریاست مخالف بیانات کے کیس میں جاوید لطیف کو ریمانڈ ختم ہونے پر ماڈل ٹاون کچہری پیش کیا گیا۔

پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ پولی گرافک سمیت 3 ٹیسٹ کروا لیے ہیں اور دوسرا موبائل میں موجود واٹس ایپ گروپس دیکھنے ہیں۔ استدعا کی کہ ملزم جاوید لطیف کا 2 روزہ جسمانی ریمانڈ دیا جائے۔

دوران سماعت جاوید لطیف نے عدالت میں بتایا کہ اگر عوامی نمائندہ اداروں میں بیٹھے لوگوں کی غلطیوں کی نشاندہی نہیں کر سکتا تو وہ اپنے حلف کی خلاف ورزی ہے، اداروں میں بیٹھے چند لوگوں پر تنقید کرنا اگر غداری ہے تو 22 کروڑ عوام کیا ہے؟

اس دوران جاوید لطیف نے ٹی وی چینل پر دیا گیا بیان عدالت میں دہرا دیا۔ جاوید لطیف نے کہا کہ مجھے بتائیں نے کہاں پہاڑوں پر چڑھنے کی بات کر دی؟ کیا فاطمہ جناح، ذوالفقار بھٹو، نواز شریف، مریم نواز اور عاصمہ جہانگیر کو غدار نہیں کہا گیا؟

لیگی ایم این اے نے مزید کہا کہ پاکستان کے نوجوان میرے بعد میرے ورثا ہیں، جنہوں نے مجھے جنم دیا وہ میرے سیاسی ورثاء نہیں۔ یہ روشنی ہے جو دکھائی جا رہی ہے۔

جاوید لطیف نے عدالت کو کہا کہ یہ دو دن مانگتے ہیں انکو 6 دن کا جسمانی ریمانڈ دیا جائے، جاوید لطیف جب تک زندہ ہے تب تک میرا ریمانڈ دیا جائے۔

پولیس نے کچہری آنے والی سڑک کو بند کیا جبکہ کچہری میں رپوٹرز کا داخلہ بھی بند کیا گیا۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

مددکا منتظر35 سالہ بھارتی اداکار چل بسا

مددکا منتظر35 سالہ بھارتی اداکار چل بسا

فلسطین کے معاملے پربولنےکی ضرورت ہے

فلسطین کے معاملے پربولنےکی ضرورت ہے