in

اسرائیلی پولیس سے جھڑپیں، 100 سے زائد فلسطینی زخمی

اسرائیلی پولیس سے جھڑپیں، 100 سے زائد فلسطینی زخمی

مقبوضہ بیت المقدس میں انتہاء پسند یہودیوں کے مارچ کے بعد اسرائیلی فورسز سے جھڑپوں میں 120 فلسطینی زخمی ہوگئے جبکہ 50 سے زائد افراد کو گرفتار بھی کرلیا ہے۔

خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق جمعرات کی رات ہونیوالی جھڑپوں میں 100 سے زائد فلسطینی زخمی ہوگئے جبکہ 20 اسرائیلی پولیس اہلکاروں کو بھی معمولی نوعیت کے زخم آئے۔

رپورٹ کے مطابق جھڑپیں پولیس کی جانب سے شہر کے قدیم باب دمشق کے باہر رکاوٹیں لگاکر اسے بند کرنے کے بعد شروع ہوئیں، اس مقام پر مسلمان روایتی طور پر شام میں افطاری کے بعد اکٹھے ہوتے تھے۔

فلسطینی ریڈ کریسنٹ کے مطابق ان کے پاس 105 زخمیوں کو لایا گیا جن میں سے 20 کو اسپتال میں داخل کرلیا گیا ہے۔ اسرائیلی پولیس کے مطابق 3 زخمی پولیس اہلکاروں کو اسپتال لے جایا گیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق بیت المقدس میں جھڑپوں کے بعد اسرائیلی پولیس کا کہنا ہے کہ اس نے 50 سے زائد افراد کو گرفتار کرلیا، گرفتار افراد کو جمعہ کی صبح ریمانڈ کیلئے عدالت میں پیش کردیا گیا۔

دو الگ مقامات پر ہونیوالی جھڑپوں میں اسرائیلی سیکیورٹی فورسز کو رمضان میں عائد پابندیوں پر احتجاج کرتے فلسطینیوں اور عرب مخالف مظاہرہ کرنیوالے شدت پسند یہودیوں کا سامنا کرنا پڑا۔

حالیہ دنوں میں مقبوضہ بیت المقدس میں کشیدگی میں اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے۔ شہری نماز جمعہ کے سلسلے میں بڑھتی ہوئی سیکیورٹی کی وجہ سے حالات کی مزید خرابی کے خدشے کا شکار ہیں۔

رمضان کے مہینے کے آغاز سے ہی فلسطینی مظاہرین اور اسرائیلی پولیس کے درمیان روزانہ رات کو جھڑپیں ہورہی ہیں۔

رپورٹ کے مطابق لاہاوا نامی شدت پسند یہودی گروہ کی قیادت میں سینکڑوں مظاہرین نے باب دمشق کی جانب مارچ شروع کیا، جو ‘عربوں نکل جاؤ’ کے نعرے لگارہے تھے۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

کرونا مریضوں کا دوسروں سے میل جول حرام ہے، مفتی اعظم

کرونا مریضوں کا دوسروں سے میل جول حرام ہے، مفتی اعظم

کسی سے امتیازی سلوک نہیں ہوگا، فردوس عاشق اعوان

کسی سے امتیازی سلوک نہیں ہوگا، فردوس عاشق اعوان