in

بغداد:پوپ فرانسس کی ایت اللہ سیستانی سے تاریخی ملاقات

بغداد:پوپ فرانسس کی ایت اللہ سیستانی سے تاریخی ملاقات

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی اے پی کے مطابق پوپ فرانسس نے تاریخی دورے پر مذہب کے نام پر انتہا پسندی کرنے والوں کی شدید مذمت کی۔

ملاقات میں آیت السیستانی کا کہنا تھا کہ مسیحیوں کو بھی دوسرے عراقیوں کی طرح امن اور سلامتی حاصل ہونی چاہیے اور انہیں اپنے تمام آئینی حقوق حاصل ہونے چاہییں۔

قابل ذکر بات یہ ہے کہ آیت اللہ شاذ عام طور پر ایسی ملاقاتوں سے پرہیز کرتے ہیں، تاہم پوپ سے ان کی ملاقات تقریباً 50 منٹ تک جاری رہی جس میں دونوں رہنما بغیر ماسک گفتگو کرتے رہے۔

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ اس سے قبل پوپ فرانسس کا دورہ گزشتہ سال کرونا وائرس کے باعث ملتوی ہوا تھا۔ پوپ کے اس دورے میں اس ملاقات کو ایک انتہائی علامتی لمحے کے طور پر دیکھا گیا۔ یہ پوپ فرانسس کا عراق کا پہلا دورہ ہے، جب کہ عالمی وبا پھیلنے کے بعد یہ پوپ کا پہلا بین الاقوامی دورہ بھی ہے۔ خود پوپ فرانسس اس وقت 84 برس کے ہوچکے ہیں۔

عراق آمد پر پاپ فرانسس نے حضرت ابراہیم کی جائے پیدائش سمجھے جانے والے قدیم مقام اُر کا بھی دورہ کیا۔ پوپ کے دورہ عراق پر سیکیورٹی کے بھی سخت انتظامات کیے گئے تھے۔ عراقی سیکیورٹی فورسز کے تقریبا 10 ہزار اہلکاروں کو سیکیورٹی پر مامور کیا گیا تھا۔

پوپ کے دورہ عراق پر شیعہ عسکریت پسندوں کے کچھ گروہوں نے اس کی مخالفت کی تھی اور اسے ملکی معاملات میں مغربی مداخلت قرار دیا تھا۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

کمپوٹر لیپ ٹاپ یا پرنٹر خریدنا مزید مشکل قیمتوں میں اتنا اضافہ متوقع کہ کوئی بھی پریشان ہوجائے

کمپوٹر لیپ ٹاپ یا پرنٹر خریدنا مزید مشکل قیمتوں میں اتنا اضافہ متوقع کہ کوئی بھی پریشان ہوجائے

ویڈیو:يہ ہم ہيں،يہ مرغياں ہيں جو ہم نہيں بيچ رہے

ویڈیو:يہ ہم ہيں،يہ مرغياں ہيں جو ہم نہيں بيچ رہے