in

دوستوں کو کھانے والے آدم خور کو عمرقید

دوستوں کو کھانے والے آدم خور کو عمرقید

ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق روس کی شمال مغربی ریاست سے تعلق رکھنے والے 51 سالہ ایڈورڈ سیلزنیف کو مارچ 2016 سے مارچ 2017 کے درمیان 3 دوستوں کے قتل کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔

عدالت میں آدم خور قاتل نے اقرار جرم کرتے ہوئے انکشاف کیا کہ دوستوں کو شراب پلا کر چاقو سے مارا اور پھر ان کے گوشت کو ابال کر کھا لیا جبکہ قاتل نے اعتراف کیا گلیوں میں آوارہ پھرنے والے کتے بلیوں اور پرندوں کو بھی پکڑ کر کھا لیتا تھا۔

رپورٹ کے مطابق قاتل نے دوستوں کے جسم کے گوشت کے وہ حصے جو کھائے جانے تھے، پلاسٹک کی تھیلیوں میں رکھے اور باقی قریبی دریا میں بہا دیے تھے، ایک دوست کو کھانے کے بعد وہ اس کے فلیٹ گیا اور اس کے والدین کو بتایا کہ ان کا بیٹا کام کے سلسلے میں دوسرے شہر چلا گیا ہے۔

دوسری جانب پولیس کا کہنا تھا کہ جب مرے ہوئے لوگوں کے حصے ملے تو ان کی شناخت بے حد مشکل تھی جبکہ ماہرین نفسیات نے سیلزنیف کو صحیح الحواس قرار دیا اور کہا کہ وہ دوستوں کے قتل کے لیے مکمل طور پر ذمہ دار ٹھہرایا ہے۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

پنجاب کھڑا ہوجائے تو سلیکٹرز ڈر جاتے ہیں، مریم نواز

پنجاب کھڑا ہوجائے تو سلیکٹرز ڈر جاتے ہیں، مریم نواز

تحریک انصاف میں بغاوت کے بعد عبدالقادر سے ٹکٹ واپس

تحریک انصاف میں بغاوت کے بعد عبدالقادر سے ٹکٹ واپس