in

سعودی عرب: کروناکیسز پر 10مساجد سیل، کرفیو کا خدشہ

سعودی عرب: کروناکیسز پر 10مساجد سیل، کرفیو کا خدشہ

سعودی عرب میں مساجد میں کرونا وائرس کے مثبت کیسز سامنے آنے پر وزارت مذہبی امور نے 10 مسجدوں کو عارضی طور پر سیل کردیا جبکہ وزارت داخلہ نے ایس او پیز کی خلاف ورزیاں جاری رہنے پر ملک میں دوبارہ کرفیو کے نفاذ کا عندیہ دیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سعودی عرب کی وزارت مذہبی امور کی طرف سے جاری ایک بیان میں‌ کہا گیا ہے کہ مساجد میں افسران، ملازمین و دیگر افراد کے کرونا کا شکار ہونے کے بعد شہریوں کی جانوں کے تحفظ کے پیش نظر 10 مساجد کو سیل کردیا گیا ہے۔

بیان میں کہا گیا کہ بعض مساجد کو 24 اور بعض کو 48 گھنٹوں کیلئے بند کیا گیا ہے اور انتظامیہ کو مساجد میں جراثیم کش اسپرے جاری رکھنے کی ہدایت کی گئی ہے۔

دوسری جانب سعودی وزارت داخلہ کے ترجمان لیفٹیننٹ کرنل طلال الشلھوب نے کہا ہے کہ مملکت میں متعلقہ اتھارٹی کے ذریعے سخت اقدامات نافذ کیے جاسکتے ہیں تاہم جب تک عوام کرونا ایس او پیز کی پابندی کرتے رہیں گے تب تک کرفیو نہیں لگایا جائے گا اور اب فیصلہ عوام کے ہاتھ میں ہے۔

ایک پریس بریفنگ کے دوران وزارت داخلہ کے ترجمان نے کہا کہ متعلقہ ادارے مملکت بھر میں کرونا کی بدلتی ہوئی صورتحال پر نظر رکھے ہوئے ہیں اور اس حوالے سے انتہائی چوکس ہیں۔

لیفٹیننٹ کرنل طلال الشلھوب کا مزید کہنا تھا کہ حفاظتی تدابیر کی خلاف ورزیوں کا تناسب 72 فیصد تک ہوچکا ہے اور یہ خطرے کی علامت ہے۔

دریں اثناء وزارت صحت کے ترجمان ڈاکٹر محمد العبد العالی نے اتوار کو کرونا وائرس کی تازہ صورتحال سے متعلق بریفنگ دیتے ہوئے بتایا تھا کہ سعودی عرب میں کرونا وائرس سے متاثرین کی تعداد میں 286 فیصد اضافہ ہوچکا ہے۔

سعودی عرب میں کرونا کے نئے کیسز گزشتہ چند دنوں سے مسلسل 300 سے زیادہ سامنے آرہے ہیں۔ ہفتے کے روز گزشتہ 24 گھنٹے میں کرونا کے 317 نئے مریض سامنے آئے جبکہ 278 افراد وائرس سے صحت یاب بھی ہوئے تھے۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

وکلارہنماؤں کی عدالت میں توڑ پھوڑ کی مذمت سے گریز

وکلارہنماؤں کی عدالت میں توڑ پھوڑ کی مذمت سے گریز

ایان علی کا برسوں پُرانا خواب پورا ہوگیا

ایان علی کا برسوں پُرانا خواب پورا ہوگیا