in

میشاشفیع کیس: ڈیلی میل کے باعث بھارت میں مِس رپورٹنگ

میشاشفیع کیس: ڈیلی میل کے باعث بھارت میں مِس رپورٹنگ

متعدد میڈیا پبلیکیشن کی جانب سے یہ دعوی کیا گیا ہے کہ ہتک عزت کے مقدمے میں میشا شفیع کو تین سال کی سزا سنادی گئی ہے، یہ کیس گلوکار علی ظفر کی جانب سے دائر کیا گیا تھا، اس سے قبل میشا شفیع نے علی ظفر پر جنسی ہراساں کرنے کا الزام لگایا تھا ۔

ٹائم آف انڈیا اور آئی بی ٹائمز ی رپورٹ کے مطابق کہ پاکستان کی ایک عدالت نے میشا کو تین سال کی سزا سنائی ہے۔

انڈین پبلیکیشن کو یہ خبر کہاں سے ملی جبکہ کسی بھی پاکستانی میڈیا نے ایسی کوئی خبر شائع نہیں کی۔ ہم نے یہ جاننے کی کوشش کی تو معلوم ہوا کہ مختلف میڈیا پبلیکیشنز نے خبر سمجھے بغیر اور بناء تصدیق دوسرے ٹیبلوئڈز کی خبرنقل کردی۔

وال اسٹریٹ جرنل نے 12 مارچ کو میشا شفیع کے حوالے ایک رپورٹ شائع کی، جس کی سُرخی یہ تھی کہ ’علی ظفر پر الزام لگانے کے باعث میشا کو قانونی چارہ جوئی کا سامنا ہے‘۔

اس رپورٹ میں بتایا گیا کہ میشا کی جانب سے پاپ اسٹار علی ظفر پر الزام لگانے کے بعد ملک میں می ٹو مہم کا آغاز ہوا اور اب میشا کو ممکنہ طور پر جیل جانا پڑسکتا ہے ۔

ڈیلی میل کی سرخی

ڈیلی میل نے وال اسٹریٹ جرنل کی رپورٹ کا کچھ حصہ اپنی سرخی میں شامل کیا جس میں دعوی کیا گیا تھا کہ میشا کو ’تین سال قید کا سامنا ہے‘۔ انہوں نے ڈبلیو ایس جے کی رپورٹ کا بھی حوالہ دیا۔

ڈیلی میل کی سرخی میں کہا گیا ہے کہ پاکستانی گلوکارہ جنہوں نے پاپ اسٹار پر جنسی ہراسگی کا الزام لگایا اور اس کے ساتھ ہی می ٹو نامی تحریک بھی چلائی تھی انہیں ہتک عزت کے الزام میں تین سال قید کی سزا کا سامنا ہے۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

کراچی: اورنگی ٹاؤن میں دھماکا، تصویری جھلکیاں

کراچی: اورنگی ٹاؤن میں دھماکا، تصویری جھلکیاں

عامر خان کا سوشل میڈیا پر آخری پیغام

عامر خان کا سوشل میڈیا پر آخری پیغام