in

اداکارہ رمشا خان کو شادی کیلئے کیسا لڑکا چاہیے ؟ خود ہی بتا دیا

اداکارہ رمشا خان کو شادی کیلئے کیسا لڑکا چاہیے ؟ خود ہی بتا دیا

اداکارہ رمشا خان کو شادی کیلئے کیسا لڑکا چاہیے ؟ خود ہی بتا دیا

کراچی (ویب ڈیسک) پاکستانی ڈراموں کی معروف اداکارہ رمشا خان نے کہا ہے کہ میں جس شخص سے شادی کرنے کی خواہش رکھتی ہوں اس میں حس مزاح ہو، ساتھ ہی دانش ورانہ کوالٹی کا مالک بھی ہو، دراز قد کے مرد اچھے لگتے ہیں البتہ  ظاہری شکل و صورت  میں عام سا بھی ہو تو چلے گا۔

دنیا نیو ز کی رپورٹ کے مطابق رمشا حال ہی میں کئی ڈراموں میں فنی صلاحیتوں کو مہارت سے پیش کرچکی ہیں۔ کیریئر کوزیادہ وقت نہیں گزرا لیکن وہ اس فن میں کافی مہارت حاصل کر چکی ہیں۔ ڈراموں کے ساتھ ایک فلم’’ تھوڑا جی لے ‘‘کے ذریعے سلور سکرین کا مزہ بھی چکھ چکی ہیں۔رمشا خان نے بتایا کہ   کورونا کی وجہ سے فلم انڈسٹری بند ہے لیکن ہاں جب بھی انڈسٹری پھر سے متحرک ہوگی میں بالکل، فلمیں کرنا چاہوں گی۔ مجھے امید ہے کہ اس بحران سے نکلنے کے بعد ہماری انڈسٹری پوری طرح بحال ہوجائے گی تب تک ٹی وی ڈرامے کرکے ہی مطمئن اور خوش رہوں گی۔ تین ٹیلی موویز کرچکی ہوں،  اکثر لوگ سمجھتے ہیں کہ فلم سے ہی کیریئرکا آغاز کیا ہے لیکن ایسا نہیں ہے۔ نوعمری میں کئی بچوں کے کردار ادا کئے، سکول میں تھیٹر کیا جو میری فنی زندگی کی ابتدا تھی۔ میری والدہ کا اصرار رہا کہ اداکاری کا شوق ابھی سے ہونا چاہیے جبکہ میری تعلیم پہلی ترجیح رہی، سو پہلے اپنی تعلیم مکمل کی، ایم بی اے کی ڈگری میرے پاس ہے، عملی زندگی کیلئے تعلیم بے حد ضروری ہوتی ہے جس کا احساس وقت کے ساتھ ہوا۔ تھیٹر سے ہی اداکاری کا آغاز کیا۔ بعد ازاں ماڈلنگ کی دنیامیں قدم رکھا،متعدد مختلف برانڈ ز کے کمرشلز کئے اوراشتہاری فلموں میں کام کیا۔ایجوکیشن کے دور کے دوستوں نے فیچر فلم ’’تھوڑا سا جی لے‘‘ بنانے کا آغاز کیا تو انکارنہ کرسکی ،لیجنڈری مہتاب اکبر راشدی کے صاحبزادے رافع راشدی کی فلم میں مجھ سمیت کئی نئے فنکاروں نے کام کیا۔ فلم کو کامیابی تو نہ ملی البتہ میری شناحت ضرور ہوگئی۔ مقامی چینل پر وی جے کے طور پر بھی کام کیا۔

اداکارہ کا کہناتھاکہ  سچ پوچھیں تو ایکٹریس بننے کے بارے میں کبھی سوچا نہیں تھا بس ارادہ یہی تھا کہ بزنس میں ڈگری لے کر کوئی اچھی سی جاب کرلوں گی مگر پھرآہستہ آہستہ اداکاری کی جانب سنجیدگی بڑھتی چلی گئی، ایکٹریس بنانے میں ممی کا بڑا کردار ہے، انہوں نے میری حوصلہ افزائی کی ۔ انہیں میری صلاحیتوں پر ہمیشہ بھروسہ رہا سو ان ہی کے اعتماد نے مجھے ایکٹریس بنایا۔ممی میرے لئے رول ماڈل ہیں، انہیں دیکھ کر خاص قسم کی تحریک ملتی ہے، پاپا سے الگ ہونے کے بعد جس طرح انہوں نے ہم بہنوں کی پرورش کے لئے محنت کی اسے اپنی آنکھوں سے دیکھا ہے، انہیں دیکھ کر ہی مجھ میں بھی بہت کم عمری میں کچھ نہ کچھ کمانے کا یہ جذبہ پیدا ہوا۔ممی جان صبح کے چار بجے اٹھ کر جاب کے لئے تیار ہوتیں اور پھر بارہ گھنٹے کام کرکے گھر لوٹتیں تو تھکن سے ان کا برا حال ہوتا تھا، ا ن کی محنت نے مجھے بھی اپنا بوجھ خود اٹھانے پر اکسایا لہٰذا مالی دد کے لئے میں نے ہمیشہ کچھ نہ کچھ ضرور کیا،تاکہ کسی کے آگے ہاتھ نہ پھیلانا پڑیں، آپ کو شاید یہ جان کر یقین نہ آئے کہ اسکول کے زمانے سے ہی میں نے پارٹ ٹائم کام شروع کر دیا تھا۔

رمشا کا کہناتھاکہ  یونیورسٹی میں ماڈلنگ کی آفرز آنا شروع ہوگئیں۔ لمبے قد کی وجہ سے لوگ ماڈلنگ کے لئے اپروچ کرنے لگے تھے ۔ ایک برانڈ کے لئے ماڈلنگ سے ابتدا ہوئی۔ پہلا تجربہ بہت تھکا دینے والا تھا،میں نے مسلسل 18 گھنٹے تک شوٹ کروایا ، پچاس ڈریسز پہنے ہوں گے، ایک کے بعد ایک لباس بدلنا اور اونچی ہیل پہن کر مسلسل کھڑے رہنا ایسا عمل تھا جس نے بے حال کرکے رکھ دیا۔پوری رات سو نہیں سکی۔ کمر بری طرح درد کررہی تھی۔ تب مجھے لگا کہ یہ کام میرے بس کا نہیں ۔چنانچہ ٹی وی کمرشلز کو ترجیح دینے لگی۔ پہلے شوٹ میں بہت زیادہ نروس تھی، کیمرے کے سامنے پوز بنوانابھی نہیں جانتی تھی۔ بلکہ کیمرے کے سامنے بہت شرم آ رہی تھی ۔ دیگر ٹیم ممبرز نے بھرپور سپورٹ کیا اور یوں کسی نہ کسی طرح اپنا کام کرنے میں کامیاب ہوئی ۔

اداکارہ کاکہناتھاکہ   روحانیت پر یقین رکھتی ہوں اور خود کو رب سے قریب کرنے کی کوشش کرتی ہوں۔ ہر کام شروع کرنے سے پہلے بسم اللہ ضرور پڑھتی ہوں، رمشا خان: جیسی پہلے تھی ویسی ہی اب بھی ہوں،بالکل بھی نہیں بدلی،اب بھی میرے پاؤں زمین پر ٹکے ہیں، شہرت وغیرہ کو کبھی دماغ میں گھسنے نہیں دیا۔

مزید :

تفریح





Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Saiful Malook Khokhar

پلاٹوں پرقبضے کاکیس: کھوکھر برادران کی عبوری ضمانت میں توسیع

نیپرا نے اپریل کے ماہانہ فیول چارجز ایڈجسٹمنٹ کی مد میں 44 پیسے فی یونٹ کمی کی منظوری دے دی 

نیپرا نے اپریل کے ماہانہ فیول چارجز ایڈجسٹمنٹ کی مد میں 44 پیسے فی یونٹ کمی کی منظوری دے دی