in

غناعلی کا شوہرپرتنقید کرنے والوں کیلئے سبق

غناعلی کا شوہرپرتنقید کرنے والوں کیلئے سبق

حال ہی میں شادی کرنے والی اداکارہ غنا علی کے شوہرعمیرگلزار کو ان کی جسمانی ساخت کی بنیاد پرسوشل میڈیا پرمسلسل تنقید کا نشانہ بنایا جارہا ہے، لیکن غنا علی نے ثابت کیا کہ وہ تنقید کرنے والوں سے نمٹنا بخوبی جانتی ہیں۔

غنا نے عمیر کے ہمراہ انسٹاگرام پرنئی تصاویر شیئرکرتے ہوئے کیپشن میں لکھا ” ہمیشہ ہمشہ کیلئے”۔

اداکارہ کی پوسٹ پر ان کے فالوورز کی بڑی تعداد نے پسندیدگی ظاہرکرتے ہوئے تبصرے کیے تاہم کچھ افراد نے عمیر گلزار کی ظاہری شخصیت کو لیکر نامناسب الفاظ میں اپنے خیالات کااظہار کیا۔

گھانا نے اپنے شوہر کے ساتھ ایک تصویر شیئر کرتے ہوئے لکھا ، “ہمیشہ اور ہمیشہ کے لئے۔” پیروکاروں کی ایک بڑی تعداد نے جوڑے کو مبارکباد پیش کی اور ان کی خوش قسمتی کی خواہش ظاہر کی ، لیکن کچھ لوگوں نے گھانا کی اس پوسٹ کو اس کے شوہر کے بارے میں چھپ کر تبصرہ کرنے کا موقع سمجھا۔

ایک خاتون صارف نے تبصرہ کیا،” مبارک ہو، کیا یہ امید سے ہیں؟ ”۔
جواب میں غنا کا کہنا تھا ۔ ” نہیں پیاری، لیکن تمہارا دماغ ہے”۔

ایک اور صارف نے لکھا ” دل تو گدھے پر بھی آجاتا ہے” جس پرغنا نےجواب دیا کہ ہاں ایسے ہی کسی کا دل تم پر بھی آجائے گا۔

مئی 2021 کے وسط میں عمیرگلزار سے شادی کرنے والی غنا کو فورا بعد سے ہی تنقید کرنے والوں کا سامنا ہے جس پر وہ یہ درخواست بھی کرچکی ہیں کہ مجھ پر تنقید کرلیں لیکن میرے شوہر کو کچھ نہ ہیں، تاہم غنا اس کشتی کی اکیلی سوارنہیں۔

مختلف شوبزشخصیات کو اکثران کی ذاتی پسند ناپسند کے حوالے سے تنقید کا نشانہ بنایا جاتا رہا ہے، مئی 2020 میں صدف کنول اورشہروزسبزواری کو سوشل میڈیا پرشدید ردعمل کاسامنا کرنا پڑا تھا جس کی وجہ شہروز کی سائرہ یوسف سے علیحدگی تھی۔

حال ہی میں ساحرعلی بگا کے ساتھ گانے ‘بدنامیاں’ سے گلوکاری کے میدان میں قدم رکھنے والی ماڈل واداکارہ علیزے شاہ کو بھی ان کے لباس کے انتخاب پر بہت سے القابات سے نوازاگیا۔ بیشترسوشل میڈیا صارفین نے کہا کہ وہ اپنی معصومیت کھورہی ہیں ۔ علیزے سے تنقید کرنے والے تمام افراد پرواضح کیا کہ اس معاملے میں کسی کی منظوری لینے کی پابند نہیں ہیں۔

صارفین کی یہ ٹرولنگ صرف شوبزستاروں کے ذاتی رشتوں تک محدود نہیں بلکہ بغیر کچھ سوچے سمجھے جسمانی ساخت پربھی تبصرے دیکھنے میں آتے ہیں۔ اداکارہ ژالے سرحدی کی پوسٹ پر ان کے پیروں کو مردانہ ٹائپ کہا گیا۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Usman Dar

نیشنل یوتھ کونسل کے دوسرے بیچ کی منظوری

Telecom

بلوچستان کے 6اضلاع میں موبائل انٹرنیٹ سروس بحال