in

تنخواہوں میں اضافے سے 40ارب روپےکا بوجھ پڑیگا، وزارت خزانہ

ISB employees protest

وزارت خزانہ کے مطابق تنخواہیں بڑھانے سے قومی خزانے پر 40 ارب روپے کا اضافی بوجھ پڑے گا اور اگلے 4 ماہ میں 10 ارب جبکہ آئندہ سال تنخواہوں کا بل مزید 30 ارب بڑھ جائے گا۔

حکام وزارت خزانہ نے یہ بھی کہا کہ تنخواہوں میں اضافے کے لیے آئی ایم ایف سے اجازت لینے کی ضرورت نہیں کیونکہ آئی ایم ایف قدغن نہیں لگاتا تاہم حکومتی آمدن بڑھانے پر زور دیتا ہے۔

سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافے کا نوٹیفکیشن جاری

واضح رہے کہ حکومت نے وفاقی سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں 25 فیصد اضافے کا نوٹیفیکیشن جاری کر دیا ہے جس کے مطابق یکم مارچ 2021ء سے گریڈ 1 سے 19 کے ملازمین کو 2017ء کی بنیادی تنخواہ پر 25 فیصد ایڈہاک الاؤنس ملے گا۔

نوٹیفکیشن کے مطابق گریڈ 1 سے 16 تک کی پوسٹوں یا اس کے مساوی آسامیوں کو خیبر پختوانخوا حکومت کی طرز پر یکم مارچ سے اپ گریڈ کرنے کا بھی اصولی فیصلہ کرلیا گیا ہے۔

نئے بجٹ میں ٹائم اسکیل پروموشن پر بھی غور ہوگا جبکہ ایڈہاک ریلیف کو جولائی 2021ء سے بنیادی تنخواہ کا حصہ بنایا جائے گا، صوبوں کو بھی اپنے وسائل کے مطابق فیصلہ کرنے کی سفارش کی جائے گی۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

کون کون سی مشہور کمپنیاں بٹ کوائن کی حمایت میں آگے آگئیں؟ قیمت اتنی بڑھ گئی کہ یقین نہ آئے

کون کون سی مشہور کمپنیاں بٹ کوائن کی حمایت میں آگے آگئیں؟ قیمت اتنی بڑھ گئی کہ یقین نہ آئے

پاکستان پیپلزپارٹی کاسینیٹ الیکشن شیڈول پرتحفظات کا اظہار

پاکستان پیپلزپارٹی کاسینیٹ الیکشن شیڈول پرتحفظات کا اظہار