in

ڈالر 5 ماہ کی بلند ترین سطح پر

ڈالر مزید مہنگا ہوگیا، آج کے کرنسی ریٹ

فاریکس ایسوسی ایشن سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق ڈالر گزشتہ روز کے مقابلے میں 70 پیسے اضافے سے 160.20 پیسے کا ہوگیا۔

آخری بار ڈالر رواں سال فروری میں 160.33 کی سطح پر دیکھا گیا تھا۔ ڈالر کی قیمت اگست 2020ء میں 168.87 روپے کی بلند ترین سطح پر پہنچی تھی۔

ایگزیکٹو ڈائریکٹر پراچہ ایکسچینج ظفر پراچہ نے سماء ڈیجیٹل سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ افغانستان سے امریکی فوج کے انخلاء اور وہاں طالبان کے قبضے کے باعث خطے میں امن و امان کی صورتحال غیریقینی ہوتی جارہی ہے، جس کے باعث حکومت پاکستان کی تشویش بھی بڑھ گئی ہے کہ آئندہ دنوں افغانستان کے ساتھ تعلقات کیسے رہیں گیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان کی افغانستان میں برآمدات بھی متاثر ہوسکتی ہے، برآمدات کم ہوں گی تو پاکستان میں ڈالر بھی کم آئیں گے، پاکستانی روپے پر دباو بڑھنے کے پیشِ نظر لوگ ڈالر فروخت نہیں کررہے اور مارکیٹ میں ڈالر کی ترسیل کم جبکہ طلب میں اضافہ ہوگیا۔

ظفر پراچہ نے کہا کہ جوں ہی ڈالر کی ترسیل نارمل ہوگی ڈالر کی قیمت دوبارہ 155 سے 157 روپے کی حد تک آجائے گی۔

ظفر پراچہ نے مزید کہا کہ کیونکہ پاکستان کی برآمدات اور ترسیلاتِ زر میں گزشتہ مالی سال اضافہ ہوا ہے، اس کے علاوہ حکومت نے مہنگائی کی شرح میں بھی اضافہ نہیں کیا تو ایسا نہیں لگتا کہ روپے پر دباؤ بڑھے گا۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

سونا ایک بار پھر مہنگا

سونا ایک بار پھر مہنگا

دلیپ کمار اور سائرہ بانو  کے گھر کس حادثے کی وجہ سے اولاد نہیں ہوئی؟

دلیپ کمار اور سائرہ بانو  کے گھر کس حادثے کی وجہ سے اولاد نہیں ہوئی؟