in

اسٹیٹ بینک کاآئندہ 2ماہ کیلئے نئی مانیٹری پالیسی کااعلان

اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے نئی مانیٹری پالیسی کا اعلان کردیا، شرح سود 7 فیصد پر برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ رضا باقر کا کہنا ہے کہ بجلی اور تیل کی عالمی قیمتیں بڑھنے سے مہنگائی میں عارضی طور پر اضافہ ہوسکتا ہے۔

گورنر اسٹیٹ بینک رضا باقر نے کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے نئی آئندہ 2 ماہ کیلئے نئی مانیٹری پالیسی کا اعلان کردیا۔ انہوں نے بتایا کہ مانیٹری کمیٹی نے آئندہ 2 ماہ کیلئے شرح سود 7 فیصد پر برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

گورنر اسٹیٹ بینک کا کہنا تھا کہ مرکزی بینک نے پہلی بار فارورڈ گائڈنس دینے کا فیصلہ کیا ہے، جس کے مطابق شرح سود مستقبل قریب میں بھی 7 فیصد پر برقرار رہے گی، شرح سود بڑھنے کا امکان نہیں، جیسے جیسے معاشی حالت بہتر ہوئی اور مانیٹری پالیسی تبدیل کرنے کی ضرورت پڑی تو اسے یکدم نہیں کیا جائے گا۔

رضا باقر نے مزید کہا کہ مہنگائی 7 سے 9 فیصد تک رہنے کا خدشہ ہے، بجلی کی قیمت اور پیٹرولیم مصنوعات کی عالمی قیمتوں میں اضافے سے عارضی طور پر مہنگائی کی شرح بڑھ سکتی ہے، ملکی معاشی حالات بہتر ہورہے ہیں، ہماری معاشی حالت جون 2019ء سے بہت بہتر ہے، معاشی ریکوری کو سپورٹ کرنا وقت کی ضرورت ہے۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

سٹیٹ بینک نے مانیٹری پالیسی کا اعلان کردیا مہنگائی میں اضافے کی بھی پیشگوئی

سٹیٹ بینک نے مانیٹری پالیسی کا اعلان کردیا مہنگائی میں اضافے کی بھی پیشگوئی

ڈالر ایک بار پھر مہنگا ہوگیا، آج کے کرنسی ریٹ